رام مندر تعمیر: چندہ کے نام پر لوگوں کو ٹھگنے والے 5 افراد کے خلاف کیس درج

ٹھگی کرنے والے گروپ کی خبر چندہ جمع کرنے والے اصل گروپ کو اس وقت لگی جب وہ چندہ لینے پہنچے اور لوگوں نے بتایا کہ انھوں نے تو پہلے ہی چندہ دے دیا ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

تنویر

پورے ملک میں رام مندر تعمیر کے لیے چندہ اکٹھا کرنے کی مہم رام مندر ٹرسٹ اور وی ایچ پی (وشو ہندو پریشد) کی مشترکہ کوششوں سے چل رہی ہے۔ کئی کروڑ روپے کا چندہ اب تک اکٹھا بھی کیا جا چکا ہے، لیکن اس درمیان چندہ کے نام پر دھوکہ دہی کی کئی خبریں بھی سامنے آ چکی ہیں۔ تازہ معاملہ اتر پردیش کے ایودھیا سے ہی جڑا ہوا ہے جہاں چندہ کے نام پر لوگوں کو ٹھگنے کے الزام میں پولس نے پانچ لوگوں کے خلاف کیس درج کر کارروائی شروع کر دی ہے۔

میڈیا ذرائع سے موصول ہو رہی خبروں کے مطابق ایودھیا میں کچھ لوگ خود کو ایک مقامی ادارہ کا رکن بتا کر عوام سے مبینہ طور پر رام مندر تعمیر کے لیے چندہ اکٹھا کر رہے تھے۔ اس سلسلے میں پانچ لوگوں کے خلاف کیس درج کیا گیا ہے۔ ان پانچ ملزمین میں سے ایک کا مجرمانہ ریکارڈ بھی بتایا گیا ہے اور پولس نے اسے گرفتار بھی کر لیا ہے۔

بتایا جاتا ہے کہ وی ایچ پی کے ضلع صدر کی تحریری شکایت کے بعد پولس نے پانچوں ملزمین کے خلاف کارروائی شروع کی ہے۔ معاملہ سنگڑھی تھانہ کے تحت کالا مندر علاقہ کا ہے جہاں فرضی ٹیم لوگوں سے چندہ اکٹھا کرنے کے لیے پہنچی تھی۔ اس کی خبر چندہ جمع کرنے والے اصل گروپ کو اس وقت لگی جب وہ چندہ لینے پہنچے اور لوگوں نے بتایا کہ انھوں نے تو پہلے ہی چندہ دے دیا ہے۔ لوگوں کے ذریعہ دوبارہ پیسہ دینے سے منع کیے جانے کے بعد فرضی گروپ سے متعلق شکایت تھانہ میں کی گئی۔

وی ایچ پی کے ایک افسر نے پولس کو بتایا کہ اس فرضی ادارہ کے اراکین نے چندہ دینے والوں کو فرضی رسیدیں بھی جاری کی تھیں، جب کہ رام مندر تعمیر کے لیے پیسے جمع کرنے کا اختیار انھیں ہے ہی نہیں۔ پولس نے ملزمین کے خلاف تعزیرات ہند کی دفعہ 420، 467، 468 اور 471 کے تحت معاملہ درج کیا اور گرفتاری کا عمل بھی شروع کر دیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


next