کورونا وائرس کے سبب بگڑے حالات کے لیے مودی حکومت ذمہ دار: سونیا گاندھی

سی ڈبلیو سی میٹنگ میں سونیا گاندھی نے مودی حکومت پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ’’مرکز نے قصداً سائنسی مشوروں کو نظر انداز کیا ہے۔ اسی وجہ سے آج ملک وبا کی زد میں ہے اور بھاری قیمت ادا کر رہا ہے۔‘‘

سونیا گاندھی، تصویر آئی اے این ایس
سونیا گاندھی، تصویر آئی اے این ایس
user

تنویر

کانگریس صدر سونیا گاندھی نے آج کانگریس ورکنگ کمیٹی (سی ڈبلیو سی) میٹنگ میں کئی موضوعات پر تبادلہ خیال کیا، خصوصاً کورونا وائرس کے سبب ملک میں پیدا مشکل حالات پر اظہارِ فکر کرتے ہوئے اس کے لیے مرکز کی مودی حکومت کو ذمہ دار ٹھہرایا۔ سونیا گاندھی نے میٹنگ میں کہا کہ ’’مودی حکومت نے اپنی ذمہ داری کو درمیان میں چھوڑ دیا ہے اور ویکسین کی ذمہ داری ریاستوں پر ڈال دی ہے۔‘‘ انھوں نے یہ بھی کہا کہ مرکزی حکومت کو چاہیے تھا کہ وہ سبھی لوگوں کو مفت ویکسین لگوائے۔

سونیا گاندھی نے میٹنگ میں کہا کہ اپریل سے لے کر اب تک کووڈ-19 کی شکل خطرناک ہو چکی ہے۔ مرکزی حکومت کی ناکامیاں اب لوگوں کو صاف طور پر نظر آ رہی ہیں۔ مودی حکومت پر الزام عائد کرتے ہوئے سونیا گاندھی نے کہا کہ ’’مرکز نے قصداً سائنسی مشوروں کو نظر انداز کیا ہے۔ اسی وجہ سے آج ملک وبا کی زد میں ہے اور بھاری قیمت ادا کر رہا ہے۔‘‘


میٹنگ کے دوران سونیا گاندھی نے بیرون ممالک سے ہندوستان بھیجی گئی امداد کی تعریف کی۔ انھوں نے کہا کہ ’’کانگریس کی جانب سے میں سبھی ممالک اور اداروں کا شکریہ ادا کرنا چاہتی ہوں جو مختلف طریقوں سے ہماری مدد کر رہے ہیں۔‘‘ ساتھ ہی سونیا گاندھی نے میٹنگ میں کانگریس کارکنان سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ ’’ہم سب کووڈ بحران سے پریشان ہیں، لیکن یہ میٹنگ انتخابی نتائج پر تبادلہ خیال کرنے کے لیے طلب کی گئی ہے۔‘‘ انھوں نے کہا کہ انتخابات میں ملی شکست سے وہ مایوس ہیں، کیرالہ اور بنگال میں ملی شکست سے سبق لینے کا وقت آ گیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔