حکومت کو پیگاسس معاملے میں پارلیمنٹ میں جواب دینا چاہئے: راہل گاندھی

راہل گاندھی نے کہا کہ پیگاسس ہتھیار دہشت گردوں اور ملک دشمنوں کے خلاف استعمال ہونا چاہئے تھا، لیکن حکومت اسے جمہوری اداروں کے خلاف استعمال کر رہی ہے۔

تصویر ویپن
تصویر ویپن
user

یو این آئی

نئی دہلی: کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے پیگاسس اور کسانوں کے معاملے پر پارلیمنٹ میں ہنگاموں کا جواز پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کی پارٹی اپنی ذمہ داریاں نبھا رہی ہے اور حکومت کو پارلیمنٹ میں پیگاسس جیسے حساس معاملے میں جواب دینا چاہئے۔

راہل گاندھی نے بدھ کو 14 اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں سے ملاقات کے بعد پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر صحافیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت پیگاسس کو اپنے عوام اور جمہوری اداروں کے خلاف بطور ہتھیار استعمال کر رہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ یہ ہتھیار دہشت گردوں اور ملک دشمنوں کے خلاف استعمال ہونا چاہئے تھا لیکن حکومت اسے جمہوری اداروں کے خلاف استعمال کر رہی ہے۔


انہوں نے بتایا کہ پیگاسس نہ صرف ان کے خلاف استعمال ہو رہا ہے بلکہ اسے سپریم کورٹ، اپوزیشن رہنماؤں، صحافیوں، کارکنوں وغیرہ کے خلاف بھی استعمال کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے سوال کیا کہ حکومت ایوان میں اس سنگین مسئلے پر بات کرنے سے کیوں بچ رہی ہے۔ کانگریس رہنما نے کہا کہ ان پر الزام لگایا جارہا ہے کہ ان کی پارٹی پارلیمنٹ کو کام نہیں کرنے دے رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پیگاسس کے ذریعے ملک کی جمہوریت پر حملہ کیا جا رہا ہے اور ان کی پارٹی اس طرح کے معاملے پر سکون سے نہیں رہ سکتی، لہذا وہ پارلیمنٹ کے اندر اور باہر اپنی ذمہ داریوں کو نبھا رہی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔