رافیل گھوٹالہ کے سلسلہ میں کانگریس کا مودی حکومت پر حملہ جاری، جے پی سی تفتیش کا مطالبہ دہرایا

پون کھیڑا نے کہا کہ رافیل سودا ہندوستان اور فرانس کی حکومتوں کے درمیان ہوا تھا اور دو حکومتوں کے درمیان سودے میں بچولیا آنے کا کوئی سوال ہی نہیں ہوتا ہے۔ اگر ایسا ہوا ہے تو یہ بہت بڑا جرم ہے۔

رافیل، تصویر آئی اے این ایس
رافیل، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

نئی دہلی: کانگریس نے کہا ہے کہ رافیل طیارہ گھپلے میں فرانس کے عدالتی تفتیش بٹھانے کے 24 گھنٹے پورے ہو چکے ہیں، لیکن حکومت ہند اس بارے میں خاموشی اختیار کیے ہوئے ہے اور جوائنٹ پارلیمنٹری کمیٹی (جے پی سی) سے معاملے کی تفتیش کروانے کی اپوزیشن کے مطالبے پر غور و خوض نہیں کر رہی ہے۔

کانگریس کے ترجمان پون کھیڑا نے اتوار کے روز یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر میں خصوصی پریس کانفرنس میں الزام عائد کیا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) قومی سلامتی کا ڈھونگ کرتی ہے اور جب صحیح معنوں میں قومی سلامتیی کی بات آتی ہے تو اپنے سرمایہ دار دوستوں کو بچانے کے لیے ملک کی سلامتی سے سمجھوتہ کرنے سے نہیں ہچکتی ہے۔


انہوں نے کہا کہ رافیل سودے میں جس ملک میں رشوت پہنچی اس فرانس نے معاملے کی عدالتی تفتیش کا حکم دے دیا ہے لیکن جس ملک کے شہریوں کی خون پسینے کی کمائی دلالی میں دی گئی ہے، وہاں کی حکومت خاموش ہے اور معاملے کی تفتیش کروانے سے بچنے کی کوشش کر رہی ہے۔

ترجمان نے کہا کہ رافیل سودا ہندوستان اور فرانس کی حکومتوں کے درمیان ہوا تھا اور دو حکومتوں کے درمیان سودے میں بچولیا آنے کا کوئی سوال ہی نہیں ہوتا ہے۔ اگر ایسا ہوا ہے تو یہ بہت بڑا جرم ہے۔ لہٰذا حکومت کو اس پورے معاملے کی جے پی سی سے تفتیش کروانی چاہیے تاکہ دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو سکے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔