کانگریس میں لوٹی مشاعروں کی تہذیب

عمران پرتاپ گڑھی نے کیا نئی دہلی میں عظیم الشان مشاعرہ، ملک بھر کے نامور شعرا اور اہم شخصیات ہوئیں شریک

تصویر پریس ریلیز
تصویر پریس ریلیز
user

پریس ریلیز

نئی دہلی: جب سے عمران پرتاپگڑھی نے کانگریس اقلیتی شعبے کی قیادت سنبھالی ہے تب سے کانگریس کے خیمے میں ادیبوں، شاعروں، دانشوروں اور ادب پسندوں کی ایک بڑی تعداد نظر آنے لگی ہے۔ کانگریس نے ماضی میں بھی ادبیوں اور شاعروں کی قدر کی ہے۔ فن کاروں کو عزت بخشنے اور شاعروں سے جلسہ گاہیں بھرنے میں کانگریس نے ہمیشہ دو قدم آگے چل کر دکھایا ہے، لیکن جب سے کانگریس کو کمزور کرنے کی سازشوں نے زور پکڑا ہے تب سے ادیبوں، شاعروں اور فنکاروں کا طبقہ بھی کانگریس سے الگ تھلگ نظر آنے لگا۔ شاید جودھ پور چنتن شیور کے بعد کانگریس نے محسوس کیا کہ اگر اسے پھر سے عوامی مقبولیت درکار ہے تو پھر سے اپنے قائدین کے نقش قدم پر چلنا ہوگا۔ اسی کے چلتے کانگریس کے اقلیتی شعبے نے ماتا سندری روڈ پر واقع عالمی شہرت یافتہ غالب انسٹی ٹیوٹ میں ایک کل ہند مشاعرے کا انعقاد کیا۔

کانگریس میں لوٹی مشاعروں کی تہذیب

عمران پرتاپگڑھی کی کنوینر شپ میں کانگریس اقلیتی شعبے کی طرف سے انعقاد پذیر مشاعرہ بعنوان” شامِ راجیو“ میں ملک کے تمام معتبر، مفتخر اور مستند شعرا نے شرکت کی۔ مشاعرے میں کانگریس کے قومی، ریاستی اور مقامی ہر سطح کے لیڈران شریک ہوئے جن میں آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے قومی جنرل سیکریٹری اکھلیش پرتاپ سنگھ، خواتین کانگریس کی صدر نیتا ڈی سوزا، کانگریس ایس سی ایس ٹی شعبے کے چیئر مین راجیش لیلوٹھیا، کانگریس اقلیتی شعبہ مہاراشٹر ممبئی کے انچارج احمد خان، یوتھ کانگریس کے راہل راﺅ، سابق ممبر پارلیمنٹ ظفر علی نقوی کے علاوہ متعدد اہم شخصیات کے نام شامل ہیں۔


راجیو گاندھی کو منظوم خراج عقیدت پیش کرنے والے شعرا میں کانگریس اقلیتی شعبے کے سربراہ اور مشاعرہ کنوینر عمران پرتاپگڑھی کے علاوہ عالمی شہرت یافتہ شاعر منظر بھوپالی،چرن سنگھ بشر، طاہر فراز، اقبال اشہر، ندیم شاد، ملک زادہ جاوید، منصور عثمانی وغیرہ نے اپنے کلام سے سامعین کے دلوں پر گہری چھاپ چھوڑی۔ پروگرام کے آخر میں شعرا، سامعین اور مہمانوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے عمران پرتاپگڑھی نے کہا کہ کانگریس تہذیب و تمدن اور زبانوں کی حفاظت میں سب سے آگے رہی ہے۔ یہ مہذب لوگوں کی جماعت ہے، جوش، فراق، مجاز اور ان جیسے بے شمار شاعروں نے کانگریس کے وقار میں اضافہ کیا ہے۔ یہ سلسلہ درمیان میں رک گیا تھا اب پھر سے شروع ہوگیا ہے۔ ملک بھر کے عظیم شعرا کو کانگریس کی جانب سے منعقد ہونے والے مشاعروں میں شریک کیا جائے گا۔ کانگریس کا اقلیتی شعبہ ہر سال مشاعرو کے ذریعے اپنے قائدین کو خراج عقیدت پیش کرے گا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔