خیبرپختونخواہ میں دہشت گردوں کے حملے میں دو پولیس اہلکاروں کی موت

یعقوب بخاری نے کہا کہ دہشت گردوں نے پولیس کی گاڑی پر اس وقت فائرنگ کی جب وہ مانجھی گاؤں سے اپنی ڈیوٹی پوری کر کے واپس آ رہی تھی، جس میں ایک پولیس اہلکار کی موت ہوگئي اور چار دیگر زخمی ہو گئے۔

<div class="paragraphs"><p>ملی ٹنٹ، علامتی تصویر آئی اے این ایس</p></div>

ملی ٹنٹ، علامتی تصویر آئی اے این ایس

user

یو این آئی

ڈیرہ اسماعیل خان/لکی مروت: پاکستان میں صوبہ خیبر پختونخواہ کے جنوبی اضلاع ٹانک اور لکی مروت میں پیر کے روز مردم شماری کی ٹیموں پر الگ الگ دہشت گردانہ حملوں میں دو پولیس اہلکاروں کی موت ہوگئی اور چار دیگر زخمی ہو گئے۔ پولیس ترجمان سید یعقوب بخاری نے بتایا کہ دہشت گردوں نے ضلع ٹانک کے علاقہ کوٹ اعظم میں مانجھی گاؤں سے لوٹتے ہوئے پولیس کی گاڑی پر حملہ کیا، حملے کے بعد دہشت گرد موقع سے فرار ہوگئے۔

یعقوب بخاری نے کہا کہ دہشت گردوں نے پولیس کی گاڑی پر اس وقت فائرنگ کی جب وہ مانجھی گاؤں سے اپنی ڈیوٹی پوری کر کے واپس آ رہی تھی، جس میں ایک پولیس اہلکار کی موت ہوگئي اور چار دیگر زخمی ہو گئے۔ انہوں نے بتایا کہ زخمی پولیس اہلکاروں کو ٹانک کے صدر اسپتال لے جایا گیا جہاں ضروری علاج کی عدم دستیابی کے باعث انہیں ڈیرہ اسماعیل خان منتقل کر دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں نے موقع پر پہنچ کر دہشت گردوں کے خلاف سرچ آپریشن شروع کر دیا۔ جاں بحق پولیس اہلکار کی شناخت کوہاٹ پولیس ٹریننگ سینٹر کے نواب خان کے نام سے ہوئی ہے جو ضلع سوات کا باشندہ ہے۔


دوسری جانب گزشتہ روز ضلع لکی مروت کے علاقہ پیر والا میں بھی حملے کا واقعہ پیش آیا، جہاں مردم شماری ٹیم پر دہشت گردانہ حملہ ہوا جس میں فرنٹیئر ریزرو پولیس (ایف آر پی) کے ایک پولیس کانسٹیبل کی موت ہوگئی۔ پولیس کے مطابق دیہی علاقے میں مردم شماری کی ڈیوٹی پر مامور سرکاری عملہ کی حفاظت پر تعینات ایف آر پی کانسٹیبل دلجان دو مسلح دہشت گردوں کے حملے میں شدید زخمی ہو گیا۔

فائرنگ کے کچھ دیر بعد ڈی پی او محمد اشفاق خان کی قیادت میں پولیس کی ٹیم موقع پر پہنچ گئی اور علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کر دیا۔ ریسکیو کی ٹیم بھی موقع پر پہنچ گئی اور لاش کو گورنمنٹ سٹی اسپتال منتقل کیا۔ پولیس نے بتایا کہ کالعدم تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کا ایک رکن، جو قتل اور دہشت گردی کی سرگرمیوں کے 12 سے زائد مقدمات میں مطلوب تھا، ڈیرہ اسماعیل خان میں ایک مشترکہ کارروائی میں مارا گیا۔ ڈیرہ اسماعیل خان پولیس کے مطابق گزشتہ روز تحصیل کلاچی کے علاقے روہڑی میں پولیس اور سلامتی دستے کی مشترکہ کارروائی میں دہشت گرد عبدالرشید عرف راشدی مارا گیا۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;