لاک ڈاؤن کے دوران 8 ہزار سے زائد غیر ملکیوں نے چھوڑا نیپال

امیگریشن ڈپارٹمنٹ نے اپنی ویب سائٹ پر اطلاع دی ہے کہ 8004 غیر ملکیوں سمیت 15688 افراد مختلف ممالک کی جانب سے بھیجے گئے چارٹرڈ پروازوں کی مدد سے نیپال سے چلے گئے۔

لاک ڈاؤن، تصویر سوشل میڈیا
لاک ڈاؤن، تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

کاٹھمنڈو: نیپال میں کورونا وبا کی وجہ سے 24 مارچ سے نافذ لاک ڈاؤن کے دوران 8004 غیر ملکیوں سمیت 15000 سے زیادہ افراد بذریعہ ہوائی جہاز، نیپال چھوڑ چکے ہیں۔ نیپال امیگریشن کے محکمہ نے یہ اطلاع دی ہے۔ تاہم 22 مارچ سے ملک میں بین الاقوامی پروازیں معطل ہیں، حالانکہ نیپال حکومت نے انسانی مقصد کے لئے اور طبی آلات کی فراہمی کے لئے چارٹرڈ پروازوں کی اجازت دی ہے۔

نیپال کی کابینہ نے 20 جولائی کو قریب چار ماہ کے بعد لاک ڈاؤن ختم کرنے اور 17 اگست سے ملکی اور بین الاقوامی پروازوں کو دوبارہ شروع ہونے کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا۔ امیگریشن ڈپارٹمنٹ نے اپنی ویب سائٹ پر اطلاع دی ہے کہ 8004 غیر ملکیوں سمیت 15688 افراد مختلف ممالک کی جانب سے بھیجے گئے چارٹرڈ پروازوں کی مدد سے نیپال سے چلے گئے۔

امیگریشن ڈپارٹمنٹ کے انفارمیشن افسر رام چندر تیواری نے بتایا کہ نیپال چھوڑنے والوں میں زیادہ تر بیرون ملک پڑھنے والے نیپالی طلبا ہیں، جو لاک ڈاؤن سے پہلے نیپال آئے تھے یا نیپالی لوگوں ایسے رشتہ دار جو بیرون ملک مقیم ہیں اور کچھ نیپالی مہاجر مزدور بھی ہیں۔ محکمہ کے مطابق لاک ڈاؤن کے دوران امریکی شہریوں کی سب سے زیادہ تعداد نیپال چھوڑ رہی ہے۔ محکمہ کے مطابق لاک ڈاؤن کے دوران 1214 امریکی شہری اور 897 برطانوی شہری نیپال سے چلے گئے۔

Published: 29 Jul 2020, 11:29 AM
next