ہر کسی کے لیے ٹیکوں کی دستیابی یقینی بنانا چیلنجنگ: نرملا سیتارمن

سیتارمن نے کل واشنگٹن ڈی سی میں ہوئی آئی ایم ایف۔عالمی بینک کی سالانہ میٹنگوں سے علیحدہ اٹلی کی صدارت میں جی۔20 کے وزرائے خزانہ اور ایف ایم سی بی جی کی چوتھی میٹنگ میں شرکت کی۔

وزیر خزانہ نرملا سیتارمن کی فائل تصویر یو این آئی
وزیر خزانہ نرملا سیتارمن کی فائل تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

واشنگٹن: مرکزی وزیر خزانہ نرملا سیتارمن نے جی۔20 کے وزرائے خزانہ اور مرکزی بینکوں کے گورنروں (ایف ایم سی بی جی) کی میٹنگ میں کہا کہ وبا کی وجہ سے پیدابحران کو بہتری کے راستہ پر لانے کے لئے تمام کو ٹیکوں مساوی دستیابی یقینی بنانا ایک بڑا چیلنج ہے۔

سیتارمن نے کل واشنگٹن ڈی سی میں ہوئی آئی ایم ایف۔عالمی بینک کی سالانہ میٹنگوں سے علیحدہ اٹلی کی صدارت میں جی۔20 کے وزرائے خزانہ اور مرکزی بینکوں کے گورنروں (ایف ایم سی بی جی) کی چوتھی میٹنگ میں شرکت کی۔ یہ اٹلی کی صدارت میں جی۔20 کے تحت آخری ایف ایم سی بی جی کی میٹنگ تھی اور اس میں عالمی اقتصادی اصلاحات، کمزور ممالک کو وبا میں حمایت، عالمی صحت، موسمیاتی اقدامات، بین الاقومی ٹیکس اور مالیاتی شعبے سے متعلق مختلف امور پرتبادلہ خیال کیا گیا اور معاہدے ہوئے۔


وبا سے مستقل طورپر ابھرنے کے لئے جی 20 کے وزرائے خزانہ اور مرکزی بینکوں کے گورنر مالیاتی اقدامات کو وقت سے پہلے واپس لینے سے بچنے، ساتھ ہی مالی استحکام اور طویل مدتی استحکام کو برقرار رکھنے اور منفی اثرات اور منفی اثرات کو بڑھنے سے روکنے پر بھی اتفاق رائے ہوا۔ نرملا سیتارمن نے کہا کہ بحران کو بہتری کی راہ پر لانے کے لئے تمام کو ٹیکوں کی مساوی دستیابی یقینی بنانا ایک بڑا چیلنج ہے۔ وزیر خزانہ نے مشورہ دیا کہ حمایت جاری رکھنا، لچک میں اضافہ، پیداواری صلاحیت بہتر بنانا اور ساختی اصلاحات کو ہمارے پالیسی اہداف میں شامل ہونے چاہئیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔