اب راجستھان بی جے پی کو لگا جھٹکا، ہریش ڈابی سمیت 15 بی جے پی اور آزاد کونسلر کانگریس میں شامل

بی جے پی کو چھوڑ کر کانگریس کی رکنیت حاصل کرنے والوں میں کونسلر سونینا شاہ، اشوک گوئل، چرنجیت سنگھ، ملکہ سونی، جگدیش کڈیلا، سنیل نائک اور خود میونسپلٹی کے نائب صدر ہریش ڈابی شامل ہیں۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

سری گنگا نگر: راجستھان کے سری گنگا نگر ضلع میں رائے سنگھ نگر میونسپل کے نائب صدر ہریش ڈابی سمیت 15 بی جے پی اور آزاد کونسلر کانگریس میں شامل ہوگئے۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق میونسپل بورڈ میں اب کانگریس کونسلروں کی تعداد 18 ہوگئی ہے۔ اس سے بی جے پی میونسپل صدر منیش کوشل ٹونی اقلیت میں آگئے ہیں۔ بورڈ میں کل 35 کونسلر ہیں۔ سمجھا جارہا ہے کہ میونسپلٹی کے صدر منیش کوشل اور نائب صدر ہریش ڈابی کی آپسی رنجش اور گروپ بازی کے سبب یہ پھیر بدل ہوا ہے۔

دوپہر میں ہریش ڈابی سمیت 18 کونسلر پدم پور میں جاکر کانگریس ایم ایل اے گرمیت کنور سے ملے۔ ان میں تین کانگریس کے کونسلر شامل تھے۔ ڈابی سمیت 15 کونسلروں نے کانگریس کی رکنیت اختیار کرنے کی خواہش ظاہر کی۔ گرمیت کنور نے انہیں پارٹی کی رکنیت حاصل کرائی۔


کانگریس کی رکنیت حاصل کرنے والوں میں بی جے پی کو چھوڑ کر آنے والے کونسلر سونینا شاہ، اشوک گوئل، چرنجیت سنگھ عرف گنگ، ملکہ سونی، جگدیش کڈیلا، سنیل نائک اور خود میونسپلٹی کے نائب صدر ہریش ڈابی شامل ہیں۔ آزاد کونسلروں میں فتح چند اگرول، سنجے نائک، ہنس راج نائک، سریندر عرف وکی، شیام سندر بالمیکی، نتیش بشنوئی، شرون پاریک اور سروج کانڈا شامل ہیں۔

دس مہینے قبل میونسپل بورڈ کے انتخاب میں صدر عہدے کے امیدوار نہ بنائے جانے کے معاملے پر اشوک گوئل پارٹی سے ناراض چل رہے تھے۔ 35 رکنی بورڈ کے لئے بی جے پی کے 16 اور کانگریس کے تین کونسلر منتخب ہوئے تھے جبکہ 16 کونسلر آزاد منتخب ہوئے تھے۔ منیش کوشل ٹونی آزاد کونسلر منتخب ہوئے، لیکن بی جے پی نے انہیں صدر کے الیکشن میں ٹکٹ دے دیا۔ کوشل آزاد میونسپل صدر منتخب ہوئے۔ ان کے سامنے کانگریس نے امیدوار کھڑا نہیں کیا۔ میونسپل ایکٹ کے مطابق میونسپلٹی کے خلاف ابھی تحریک عدم اعتماد نہیں لائی جا سکتی۔ ایکٹ میں التزام ہے کہ منتخب میونسپل صدر کی مدت کار کم سے کم دو برس مکمل ہونے کے بعد ہی تحریک عدم اعتماد پیش کی جاسکتی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔