کورونا وبا کے دوران دس کروڑ سے زیادہ لوگ غریب ہو گئے: گوٹیرس

چار ارب سے زیادہ لوگوں کو بہت کم یا کوئی سماجی سپورٹ نہیں ہے ، نہ ہی صحت کی دیکھ بھال کے منصوبے ہیں اور نہ ہی کوئی آمدنی کا تحفظ ہے۔

فائل تصویر یو این آئی
فائل تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوٹریس نے کہا ہے کہ کووڈ۔ 19 وبائی امراض کی وجہ سے دنیا بھر میں دس کروڑ سے زائد افراد خط افلاس کے نیچے آگئے ہیں اور چار ارب سے زائد لوگوں کو کوئی سماجی امداد نہیں ملی ہے۔

بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کےکووڈ۔ 19 کے بحران کے لیے وقف ، فنڈ ایونٹ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر گوٹیرس نے کہا ، “وبائی بیماری نے دس کروڑ سے زیادہ لوگوں کو غربت میں رہنے پر مجبور کیا ہے۔ چار ارب سے زیادہ لوگوں کو بہت کم یا کوئی سماجی سپورٹ نہیں ہے ، نہ ہی صحت کی دیکھ بھال کے منصوبے ہیں اور نہ ہی کوئی آمدنی کا تحفظ ہے۔


اقوام متحدہ کے سربراہ نے خبردار کیا کہ ویکسین کی غیر مساوی تقسیم دنیا بھر میں نئی ​​بیماریوں سے لاکھوں اموات کا سبب بنے گی اور معاشی سست روی کی مدت کو طویل کرے گی جو غریب ممالک کو سب سے زیادہ متاثر کرے گی۔ انہوں نے کہا ، "ہمیں جس چیز کی ضرورت ہے وہ اس وبائی مرض کو ختم کرنے کے لیے ایک جرات مندانہ اجتماعی کوشش ہے جو ایک پائیدار اور جامع عالمی بحالی کے قابل ہوگی۔"

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔