اتر پردیش: اسدالدین اویسی سے ہاتھ ملا سکتے ہیں شیوپال یادو، امکانات روشن

شیوپال یادو نے میڈیا نمائندوں سے اپنی بات چیت میں کہا کہ ان کی پارٹی کا اسد الدین اویسی کی پارٹی ایم آئی ایم سے اتحاد ہوسکتا ہے۔ اس کے لئے پارٹی کارکنوں سے بات چیت جاری ہے۔

شیوپال یادو اور اویسی، تصویر آئی اے این ایس
شیوپال یادو اور اویسی، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

لکھنؤ: پرگتی شیل سماج وادی پارٹی(لوہیا) کے سربراہ و سابق سماج وادی لیڈر شیوپال یادو نے بدھ کو کہا کہ سال 2022 کے اسمبلی انتخابات میں ان کی پارٹی کا حیدرآباد سے رکن پارلیمان اسد الدین اویسی کے پارٹی آل انڈیا اتحادالمسلمین(اے آئی ایم آئی ایم) سے اتحاد ہوسکتا ہے۔ اس کے امکانات روشن ہیں۔

سماج وادی پارٹی(ایس پی) کے ضلع صدر کے یہاں ایک شادی تقریب میں شرکت کرنے بارہ بنکی پہنچے شیوپال یادو نے میڈیا نمائندوں سے اپنی بات چیت میں کہا کہ ان کی پارٹی کا اسد الدین اویسی کی پارٹی ایم آئی ایم سے اتحاد ہوسکتا ہے۔ اس کے لئے پارٹی کارکنوں سے بات چیت جاری ہے۔ شیوپال نے کہا کہ بی جے پی کو ہٹانے کے لئے وہ یکساں نظریات کے حامل سیاسی پارٹیوں کا اتحاد بنایا جارہا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ان کی کوشش ہے کہ سیکولر پارٹیوں کا ایک اتحاد بنے۔

سراپا احتجاج کسانوں سے ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کے ذریعہ بنائے گئے موجودہ تینوں زرعی قوانین کسانوں کے خلاف ہیں۔ یہ قانون صرف سرمایہ داروں کو فائدہ پہنچانے کے لئے بنائے گئے ہیں۔اور یہی وجہ ہے کہ پورے ملک میں کسان سڑکوں پر ہیں اور حکومت ان کے مطالبات پر کان نہیں رکھ رہی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔