یوپی اسمبلی انتخاب: سیٹوں کی تقسیم کے لیے سماجوادی پارٹی کی اتحادی پارٹیوں کے ساتھ میٹنگ

میٹنگ میں سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی کے اوم پرکاش راجبھر، آر ایل ڈی کے ڈاکٹر مسعود احمد اور پی ایس پی کے شیوپال سنگھ یادو اور ان کے بیٹے آدتیہ یادو سمیت دیگر پارٹیوں کے لیڈروں نے شرکت کی۔

تصویر ٹوئٹر @yadavakhilesh
تصویر ٹوئٹر @yadavakhilesh
user

یو این آئی

لکھنؤ: اترپردیش اسمبلی انتخابات کے پیش نظر سماج وادی پارٹی (ایس پی) صدر اکھلیش یادو نے بدھ کو اتحادی پارٹیوں کے ساتھ سیٹوں کی تقسیم کے سلسلے میں آخری دور کی بات چیت کا آغاز کر دیا۔ ذرائع کے مطابق جنیشور مشر ٹرسٹ میں چل رہی اس میٹنگ میں سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی کے اوم پرکاش راج بھر، آر ایل ڈی کے ڈاکٹر مسعود احمد اور پی ایس پی کے شیوپال سنگھ یادو اور ان کے بیٹے آدتیہ یادو سمیت دیگر پارٹیوں کے لیڈروں نے شرکت کی۔

میٹنگ کے دوران نیشنل کانگریس پارٹی (این سی پی) کو اتحاد کے تحت ایک سیٹ دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ایس پی کی جانب سے این سی پی کے ریاستی صدر اماشنکر یادو کے ساتھ اکھلیش یادو کی تصویر سوشل میڈیا پر شیئر کرتے ہوئے جانکاری دی گئی کہ این سی پی کو بلندشہر کی انوپ شہر سیٹ دی گئی ہے۔


ایس پی کی جانب سے کئے گئے ایک ٹوئٹ میں کہا گیا ہے کہ این سی پی کے یوپی صدر اماشنکر یادو نے اکھلیش یادو سے ملاقات کر کے الیکشن پر تبادلہ خیال کیا۔ اس میں کہا گیا ہے کہ این سی پی لیڈر کے کے شرما، بلند شہر کی انوپ شہر اسمبلی سیٹ سے ایس پی۔ این سی پی اتحاد کے امیدوار ہوں گے۔

اس دوران اکھلیش نے بھی ٹوئٹ میں شامل ہونے والے اتحادی پارٹیوں کے لیڈروں کے ساتھ اپنی تصویر شیئر کرتے ہوئے کہا کہ ’ایس پی کے سبھی اتحادی پارٹیوں کے قیادت کے ساتھ آج اترپردیش کی ترقی اور مستقبل کے بارے میں بات چیت ہوئی۔ ذرائع کے مطابق میٹنگ میں پی ایس پی کو چھ سیٹیں دینے پر اتفاق ہوا ہے۔


ملحوظ رہے کہ میٹنگ میں کچھ دیر شرکت کے بعد شیوپال روانہ ہوگئے۔ حالانکہ سیٹوں کی تقسیم پر کوئی تبصرہ نہیں کیا۔ ایسا مانا جا رہا ہے کہ پی ایس پی کو گنور، جسونت نگر، بھوجپور، جسرانا، مبارکپور اور غازی پور سیٹیں دی گئی ہیں۔ موصول اطلاع کے مطابق ترنمول کانگریس (ٹی ایم سی) کو بھی ایس پی اتحاد میں ایک سیٹ دی گئی ہے۔ اس کے تحت مرزا پور ضلع می مڑہان سیٹ پر ٹی ایم سی کے للتیش پتی ترپاٹھی اپنی قسمت آزمائیں گے۔

جن پارٹیوں کے ساتھ سیٹوں کے سلسلے میں کچھ اختلافات نظر آرہے ہیں ان میں آر ایل ڈی اور سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی ہیں۔ ذرائع کے مطابق 403 اراکین اسمبلی سیٹوں میں ایس پی نے 103 سیٹیں اتحادی پارٹیوں کے لئے چھوڑنے کی پیشکش کی ہے۔ آر ایل ڈی صدر جینت چودھری کے ساتھ تین دور کی بات چیت کے بعد آر ایل ڈی کو 32 سیٹیں دینے پر اتفاق ہوا ہے۔ اختلاف ان چھ سیٹوں پر ہے جن پر ایس پی کے امیدوار آر ایل ڈی کے انتخابی نشان پر اتارے جانے ہیں۔


اس درمیان راج بھر بھی اپنی پارٹی کو کم سے کم چار درجن سیٹیں دینے پر بضد ہیں۔ مانا جاتا ہے کہ سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی سمیت دیگر اتحادی پارٹیوں کے ساتھ سیٹوں کے تال میل کے لئے اکھلیش یادو کی قیادت میں میٹنگ جاری ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ پہلے دو مراحل کے انتخابات والی سیٹوں پر امیدواروں کے ناموں کا اعلان جلد ہی ہوسکتا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔