پورا ملک فوج کے جوانوں کے پیچھے کھڑا ہے: مودی

پی ایم مودی نے کہا کہ فوج کے بہادر فوجی سرحد پر جس اعتماد کے ساتھ ڈٹے ہوئے ہیں، اس ایوان کے تمام ممبران ایک جذبہ سے یہ پیغام دیں کہ فوج کے جوانوں کے پیچھے پارلیمنٹ اور ممبران پارلیمنٹ کھڑے ہوئے ہیں۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

نئی دہلی: وزیر اعظم نریندر مودی نے آج پارلیمنٹ ہاؤس کمپلیکس میں کہا کہ پورا ملک سرحد پر کھڑے فوجی جوانوں کے پیچھے کھڑا ہے۔ آج سے شروع ہونے والے پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس کے لئے پارلیمنٹ ہاؤس کمپلیکس پہنچے پی ایم مودی نے چین کے ساتھ سرحد پر کشیدگی کے دوران فوج کے جوانوں کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے کہا ’’ہماری فوج کے بہادر فوجی سرحد پرڈٹے ہوئے ہیں، پوری ہمت کے ساتھ، جذبہ کے ساتھ، بلند حوصلوں کے ساتھ دشوار گزار پہاڑیوں میں ڈٹے ہوئے ہیں۔ جس اعتماد کے ساتھ وہ ڈٹے ہوئے ہیں، اس ایوان اور سیشن کی خاص ذمہ داری ہے کہ ایوان کے تمام ممبران ایک جذبہ سے یہ پیغام دیں گے کہ فوج کے جوانوں کے پیچھے پارلیمنٹ اور ممبران پارلیمنٹ کے ذریعے ملک فوج کے جوانوں کے پیچھے کھڑا ہے۔‘‘

وزیر اعظم نے کہا کہ پارلیمنٹ کا یہ اجلاس مخصوص ماحول میں شروع ہو رہا ہے۔ کورونا اور فرائض کے درمیان تمام اراکین پارلیمنٹ نے فرض کا راستہ منتخب کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سیشن میں کئی اہم فیصلے ہوں گے۔ بہت سے معاملوں پر بحث ہوگی۔ لوک سبھا میں جتنی زیادہ بحث ہوگی، یہاں جتنی گہری اور متنوع سے بھری بحث ہوتی ہے اتنا ہی ایوان اور ملک کو فائدہ ہوتا ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ اس بار بھی تمام ممبران پارلیمنٹ مل کر اس عظیم روایت میں اپنا بیش قیمت تعاون دیں گے۔

پی ایم مودی نے کہا کہ کورونا کے حالات میں جن انتباہ اور چوکسی کے بارے میں مطلع کیا گیا ہے اس پر عمل کرنا ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ کورونا ویکسین جلد از جلد دنیا کے کسی بھی کونے سے دستیاب ہوگی اور ہمارے سائنسداں بھی جلد سے جلد اس ویکسین کو تیار کرنے میں کامیاب ہوں۔

next