سیاحتی مقام پہلگام کے گھوڑا بانوں نے پیش کی ایمانداری کی بہترین مثال

سیاح نے بتایا کہ ’’پہلگام میں سیر وتفریح کے بعد جب وہ سری نگر پہنچے تو اُنہیں ڈرائیور کے ذریعے فون پر بتایا گیا کہ اُن کی گمشدہ سونے کی چین دو گھوڑے بانوں نے پہلگام میں پائی ہے۔‘‘

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

سری نگر: شہرہ آفاق سیاحتی مقام پہلگام میں اُس وقت ایمانداری کی ایک اور شمع روشن ہوئی جب دو گھوڑے بانوں نے سیاحوں کی گمشدہ قیمتی سونے کی چین کو واپس کیا۔ مذکورہ سیاح نے بتایا کہ ’پہلگام میں سیر وتفریح کے بعد جب وہ سری نگر پہنچے تو اُنہیں ڈرائیور کے ذریعے فون پر بتایا گیا کہ اُن کی گمشدہ سونے کی چین دو گھوڑے بانوں نے پہلگام میں پائی ہے‘۔ چنانچہ وقت ضائع کئے بغیر گھوڑے بانوں نے مذکورہ سیاح کے ڈرائیور کو بذریعہ فون مطلع کیا کہ انہوں نے سیاح کی گمشدہ چین اُٹھائی ہے۔

مذکورہ گھوڑے بان جن کی شناخت رفیق احمد اور افروز کے بطور ہوئی ہے نے 80 کلومیٹر کی مسافت طے کر کے رات کی تاریکی میں سری نگر پہنچ کر سونے کی چین سیاح کو واپس کر کے ایمانداری کی اور ایک نظیر قائم کی۔ سیر و تفریح پر آئے ہوئے سیاحوں نے کشمیر کی مہمان نوازی اور ایمانداری کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے یہاں کی ایمانداری کے بارے میں سنا تھا لیکن آج ہمیں اس بات کا ثبوت ملا کہ واقعی میں کشمیر کے لوگ قوت ایمانی سے لبریز ہیں۔


سیاح نے کہا کہ وہ سری نگر واپس آئے ہوئے تھے اور گھر کی طرف جانے کا پروگرام بنایا تھا لیکن گھوڑے بانوں نے لمبا سفر طے کر کے سونے کی چین اُن کے حوالے کی جس کے لئے ہم اُن کے بے حد مشکور ہیں۔ دریں اثنا محکمہ سیاحت نے بھی گھوڑے بانوں کی ایمانداری کو سراہتے ہوئے کہا کہ انہوں نے سونے کی چین واپس کرکے ایک مثال قائم کی ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔