کورونا متاثرین کی خودکشی کا سلسلہ جاری، اب تمل ناڈو میں بزرگ نے چھت سے لگائی چھلانگ

بزرگ کی کورونا رپورٹ پازیٹو آنے کے بعد ہفتہ کے روز کوارنٹائن سنٹر میں ڈالا گیا تھا۔ بزرگ کو کورونا وائرس سے متاثر پائے جانے کے بعد اس کے رشتہ داروں نے گھر سے نکال دیا تھا جس کی وجہ سے وہ افسردہ تھے۔

خودکشی (علامتی تصویر)
خودکشی (علامتی تصویر)
user

قومی آوازبیورو

کورونا میں مبتلا شخص کے ذریعہ خودکشی کے کئی واقعات سامنے آ چکے ہیں اور یہ سلسلہ لگاتار بڑھتا ہی جا رہا ہے۔ اب تازہ ترین خبروں کے مطابق تمل ناڈو میں ایک ضعیف العمر شخص نے عمارت کی پہلی منزل سے کود کر اپنی جان دے دی۔ میڈیا ذرائع سے موصول ہو رہی خبروں کے مطابق واقعہ تمل ناڈو کے مدورائی کا ہے جہاں ایک بزرگ شخص کی کورونا وائرس رپورٹ پازیٹو آنے کے بعد اسے کوارنٹائن سنٹر میں رکھا گیا تھا۔ بتایا جاتا ہے کہ بزرگ نے عمارت کی پہلی منزل سے کود کر خودکشی کرنے کی کوشش کی جس کی پیر کی صبح اسپتال میں موت ہوگئی۔

خبر رساں ادارہ یو این آئی کے ذریعہ اس سلسلے میں دی گئی ایک رپورٹ میں پولس کے حوالہ سے بتایا گیا ہے کہ مرنے والے کی شناخت پی دھنوش کوڈی کے طور پر ہوئی ہے جس کی عمر 65 سال تھی۔ دھنوش شہر کے پلنگناتھم علاقہ کا رہنے والا ہے۔ بزرگ کی کورونا رپورٹ پازیٹو آنے کے بعد تروپرن کنڈرم میں ہفتہ کے روز اسے تیاگ راج کالج آف انجینئرنگ میں کوارنٹائن سنٹر میں رکھا گیا تھا۔ بزرگ کو کورونا وائرس سے متاثر پائے جانے کے بعد اس کے رشتہ داروں نے گھر سے نکال دیا تھا۔ بزرگ کے لار کا نمونہ ٹیسٹ کے لئے لیا گیا تھا جو کل پازیٹو آیا تھا۔

پولس نے اس سلسلے میں مزید بتایا کہ کورونا سے متاثرہ ہونے اور کنبہ کے اراکین کے اسے چھوڑنے کے بعد وہ افسردہ تھے اور کل شام انہوں نے عمارت کی پہلی منزل سے کود کر خودکشی کرلی۔ عمارت سے کودنے کے بعد ان کے سر پر سنگین چوٹیں آئیں اور پاؤں کے ساتھ ساتھ ریڑھ کی ہڈی بھی ٹوٹ گئی تھی۔ انہیں فوری طور پر سرکاری راجا جی اسپتال لے جایا گیا جہاں سنگین چوٹوں کی وجہ سے آج صبح ان کی موت ہوگئی۔ تروپرکنڈرم پولس نے اس سلسلے میں معاملہ درج کرلیا ہے اور جانچ کی جا رہی ہے۔