یوم آزادی کی تقریبات کے لیے اسٹیج تیار، خصوصی مہمانوں میں مزدور، کسان اور اساتذہ بھی شامل

لال قلعہ کی تقریبات میں خصوصی مہمانوں کے طور پر شرکت کے لیے ملک بھر سے مختلف پیشوں سے تعلق رکھنے والے تقریبا 1800 افراد کو مدعو کیا گیا ہے۔ یہ پہل حکومت کے ’جن بھاگیداری‘ وژن سے ہم آہنگ ہے۔

<div class="paragraphs"><p>یو این آئی</p></div>

یو این آئی

user

یو این آئی

نئی دہلی: وزیراعظم نریندر مودی 15 اگست کو دہلی کے تاریخی لال قلعہ سے 77واں جشن آزادی منانے میں قوم کی قیادت کریں گے۔ وہ قومی پرچم لہرائیں گے اور تاریخی عمارت کی فصیل سے قوم سے خطاب کریں گے۔ اس سال کے یوم آزادی کے موقع پر ’آزادی کا امرت مہوتسو‘ کی تقریبات اختتام پذیر ہوں گی جس کا آغاز وزیر اعظم نے 12 مارچ، 2021 کو احمد آباد، گجرات کے سابرمتی آشرم سے کیا تھا اور یہ یومِ آزادی ایک بار پھر، ہندوستان کو 2047 تک ایک ترقی یافتہ ملک بنانے کے نریندر مودی کے خواب کو شرمندہ تعبیر کرنے کے لیے ملک کو نئے ولولے اور جوش کے ساتھ ’امرت کال‘ میں داخل کرے گا۔ 77 ویں یوم آزادی منانے کے لیے متعدد نئے اقدامات کیے گئے ہیں۔ گزشتہ سال کے مقابلے میں بڑی تعداد میں مہمانوں کو مدعو کیا گیا ہے۔

لال قلعہ کی تقریبات میں خصوصی مہمانوں کے طور پر شرکت کے لیے ملک بھر سے مختلف پیشوں سے تعلق رکھنے والے تقریبا 1800 افراد کو مدعو کیا گیا ہے۔ یہ پہل حکومت کے ’جن بھاگیداری‘ وژن سے ہم آہنگ ہے۔ ان خصوصی مہمانوں میں 400 سے زیادہ درخشاں گاؤں کے 660 سے زیادہ سرپنچ، کسان پروڈیوسر آرگنائزیشن اسکیم سے 250، پردھان منتری کسان سمان ندھی اسکیم اور پردھان منتری کوشل وکاس یوجنا کے 50-50 شرکا، سینٹرل وسٹا پروجیکٹ کے 50 شرم یوگی (تعمیراتی مزدور)، جو نئی پارلیمنٹ کی عمارت بھی شامل ہیں، سرحدی سڑکوں کی تعمیر، امرت سروور اور ہر گھر جل یوجنا کی تعمیر میں شامل کارکن، نیز پرائمری اسکول کے اساتذہ، نرسوں اور ماہی گیروں میں سے 50-50 افراد شامل ہیں۔ ان میں سے کچھ خصوصی مہمان نیشنل وار میموریل کا دورہ کریں گے اور دہلی میں اپنے قیام کے حصے کے طور پر دفاع کے وزیر مملکت اجے بھٹ سے ملاقات کریں گے۔



لال قلعہ میں تقریب دیکھنے کے لیے ہر ریاست / مرکز کے زیر انتظام علاقے کے 75 جوڑوں کو بھی ان کے روایتی لباس میں مدعو کیا گیا ہے۔ نیشنل وار میموریل، انڈیا گیٹ، وجے چوک، نئی دہلی ریلوے اسٹیشن، پرگتی میدان، راج گھاٹ، جامع مسجد میٹرو اسٹیشن، راجیو چوک میٹرو اسٹیشن، دہلی گیٹ میٹرو اسٹیشن، آئی ٹی او میٹرو گیٹ، نوبت خانہ اور شیش گنج گردوارہ سمیت 12 مقامات پر سیلفی پوائنٹس لگائے گئے ہیں۔

ان اسکیموں/ اقدامات میں گلوبل ہوپ، ویکسین اور یوگا، اجولا یوجنا، خلائی طاقت، ڈیجیٹل انڈیا، اسکل انڈیا، اسٹارٹ اپ انڈیا، سوچھ بھارت، سشکت بھارت، نیا بھارت، پاورنگ انڈیا، پردھان منتری آواس یوجنا اور جل جیون مشن شامل ہیں۔


لال قلعہ پہنچنے پر وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ، دفاع کے وزیر مملکت اجے بھٹ اور سکریٹری دفاع گریدھر ارمانے وزیر اعظم کا استقبال کریں گے۔ سکریٹری دفاع دہلی ایریا کے جنرل آفیسر کمانڈنگ (جی او سی) لیفٹیننٹ جنرل دھیرج سیٹھ کا وزیر اعظم سے تعارف کرائیں گے۔ اس کے بعد جی او سی دہلی ایریا نریندر مودی کو سلامی بیس لے جائیں گے جہاں مشترکہ انٹر سروسز اور دہلی پولیس گارڈ وزیر اعظم کو عام سلامی پیش کریں گے۔ اس کے بعد وزیر اعظم گارڈ آف آنر کا معائنہ کریں گے۔

وزیر اعظم کے لیے گارڈ آف آنر دستے میں آرمی، ایئر فورس اور دہلی پولیس کے ایک ایک افسر اور 25 اہلکار اور بحریہ کے ایک افسر اور 24 اہلکار شامل ہوں گے۔ ہندوستانی فوج اس سال کوآرڈینیٹنگ سروس ہے۔ گارڈ آف آنر کی کمان میجر وکاس سانگوان کریں گے۔ وزیر اعظم گارڈ کی فوج کے دستے کی قیادت میجر اندرجیت سچن کریں گے، بحریہ کے دستے کی قیادت لیفٹیننٹ کمانڈر ایم وی راہل رمن کریں گے اور فضائیہ کے دستے کی کمان اسکواڈرن لیڈر آکاش گنگاس سنبھالیں گے۔ دہلی پولیس کے دستے کی کمان ایڈیشنل ڈی سی پی سندھیا سوامی کریں گی۔


گارڈ آف آنر کا معائنہ کرنے کے بعد وزیر اعظم لال قلعہ کی فصیل پر جائیں گے جہاں وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ، دفاع کے وزیر مملکت اجے بھٹ، چیف آف ڈیفنس اسٹاف جنرل انل چوہان، چیف آف آرمی اسٹاف جنرل منوج پانڈے، چیف آف دی نیول اسٹاف ایڈمرل آر ہری کمار اور چیف آف ایئر اسٹاف ایئر چیف مارشل وی آر چودھری ان کا استقبال کریں گے۔ جی او سی، خطہ دہلی وزیر اعظم کو قومی پرچم لہرانے کے لیے اسٹیج پر لے جائیں گے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;