بی جے پی حکومت کسانوں کو ہراساں کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑ رہی ہے: پرینکا گاندھی

پرینکا گاندھی نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ دھان کی خریداری میں بدانتظامی کی سبب ایک کسان کو منڈی میں پڑے دھان کو آگ لگانی پڑی۔ جبکہ للت پور میں کھاد کے لئے کھڑے قطار میں یک کسان کی موت ہوگئی۔

پرینکا گاندھی، تصویر یو این آئی
پرینکا گاندھی، تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

پرینکا گاندھی نے ایک بار پھر کسانوں کے مسئلے کو لے کر بی جے پی حکومت کو گھیرا ہے۔ انہوں نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ دھان کی خریداری میں بدانتظامی کی وجہ سے لکھیم پور کے ایک کسان کو منڈی میں پڑے اپنے دھان کو آگ لگانی پڑی۔ جبکہ للت پور میں کھاد لینے کے لئے لائن میں لگے ایک کسان کی بدانتظامی کے چلتے موت ہوگئی۔ یوپی کی بی جے پی حکومت کسانوں کو ہراساں کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑ رہی ہے۔

کیا ہے معاملہ

کسان سمودھ سنگھ نے لکھیم پور کھیری منڈی میں پٹرول ڈال کر اپنے دھان کے ڈھیر کو آگ لگا دی۔ سمودھ سنگھ نے الزام لگایا تھا کہ وہ پچھلے 14 دنوں سے سرکاری منڈی میں دھان بیچنے کی کوشش کر رہے تھے۔ لیکن یہاں کوئی دھان خریدنے کو تیار نہیں،اس لئے اس سے مایوس ہو کر اس نے یہ قدم اٹھایا۔


دوسری طرف للت پور میں دو دن سے لائن میں انتظار کرنے والے کسان بھوگی رام پال کی گزشتہ روز جمعہ کو موت ہو گئی۔ جاکھ لون تھانہ علاقہ کے نیا گاؤں کے رہنے والے بھوگی رام پال لگاتار دو دن سے کھاد کے لیے سرکاری دکان کے باہر لائن میں کھڑے تھے۔ بیٹے کرپال کے مطابق اس کے والد جمعہ کی صبح سے ہی لائن میں لگے ہوئے تھے، اس دوران تقریباً ساڑھے نو بجے ان کے سینے میں شدید درد ہوا اور وہ نیچے گر گئے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔