بہار کی عوام کو وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے دیا جھٹکا، بس کرایہ میں اضافہ

نئے سال میں ریاست کے لوگوں کو بجلی کے لیے بھی زیادہ قیمت ادا کرنی پڑ سکتی ہے، بجلی کمپنیوں کی جانب سے بہار الیکٹرسٹی ریگولیٹری کمیشن کو بجلی شرحوں میں 10 فیصد اضافہ کی تجویز پیش کی گئی ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

پہلے سے مہنگائی اور خوردنی اشیاء کی بڑھی قیمتوں سے پریشان بہار کے لوگوں کو ایک اور جھٹکا دیتے ہوئے نتیش حکومت نے بسوں کے سفر کو بھی مہنگا کر دیا ہے۔ ریاستی ٹرانسپورٹیشن محکمہ نے بسوں کے کرایہ میں 67 فیصد تک کا اضافہ کر دیا ہے۔ اس درمیان بجلی بھی مہنگی ہونے کا اندیشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔

ریاستی ٹرانسپورٹیشن محکمہ کے افسر نے بتایا کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کے بعد بس کے کرایہ میں اضافہ کیا گیا ہے۔ ٹرانسپورٹیشن محکمہ کے ذریعہ بسوں کے کرایہ میں 67 فیصد تک کا اضافہ کیا گیا ہے۔ ضلع انتظامیہ کو عوامی مقامات پر بسوں کا کرایہ ظاہر کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ گزشتہ مرتبہ 6 اکتوبر 2018 کو بسوں کا کرایہ بڑھایا گیا تھا۔


بہار ٹرانسپورٹیشن محکمہ کے سکریٹری سنجے کمار اگروال نے پیر کو اس کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا۔ متعلقہ علاقائی ٹرانسپورٹیشن اتھارٹی 15 دنوں میں بنیادی کرایہ اور فی کلو میٹر ے مطابق ایک جگہ سے دوسری جگہ کا نیا کرایہ جاری کرے گا۔ اسی کے ساتھ ریاست میں مسافر کرایہ میں اضافہ کا راستہ صاف ہو گیا ہے۔

دوسری طرف نئے سال میں ریاستی عوام کو بجلی کے لیے بھی زیادہ قیمتیں ادا کرنی پڑ سکتی ہیں۔ بجلی کمپنیوں کی طرف سے بہار الیکٹرسٹی ریگولیٹری کمیشن کو سونپی گئی عرضی میں بجلی کی شرحوں میں 10 فیصد اضافہ کی تجویز پیش کی گئی ہے۔ کمیشن اب اس پر عوامی سماعت کے بعد نئی شرحیں طے کرے گا جو اگلے سال یکم اپریل سے نافذ ہوں گی۔


بتایا جاتا ہے کہ بجلی فراہمی کے خرچ میں ہوئے اضافہ کے بعد کمپنی نے سبھی درجات میں تقریباً 10 فیصد بجلی کی شرح بڑھانے کی گزارش کی ہے۔ شہری اور گھریلو صارفین کے سلیب کو تین کی جگہ دو کرنے کی بھی تجویز دی گئی ہے۔ اس میں صفر سے 100 یونٹ کو ختم کر 200 یونٹ کا پہلا سلیب اور 200 یونٹ سے زیادہ کا دوسرا سلیب طے کرنے کی تجویز پیش کی گئی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔