گوا: بی جے پی حکومت سے استعفیٰ دینے والے مائیکل لوبو بیوی سمیت کانگریس میں شامل

گوا میں پرمود ساونت کی قیادت والی بی جے پی حکومت میں وزارتی عہدہ سے استعفیٰ دینے والے مائیکل لوبو منگل کے روز کانگریس میں شامل ہو گئے، ان کی بیوی نے بھی کانگریس کی رکنیت اختیار کر لی۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

بی جے پی سے استعفیٰ دینے کے ایک دن بعد گوا کے سابق وزیر مائیکل لوبو منگل کے روز کانگریس میں شامل ہو گئے۔ اس موقع پر لوبو نے کہا کہ 14 فروری کو ہونے والے اسمبلی انتخاب میں کانگریس اکثریت حاصل کرے گی کیونکہ لوگ بی جے پی حکومت سے پریشان ہو چکے ہیں۔

کانگریس کے سینئر لیڈر دنیش گنڈو راؤ کی موجودگی میں پارٹی میں شامل ہونے کے بعد مائیکل لوبو نے کہا کہ ’’کانگریس 2022 میں 22 سیٹوں پر کامیاب ہوگی۔ گوا کے لوگ بدلاؤ چاہتے ہیں اور کانگریس اس بدلاؤ کی شروعات کرے گی۔‘‘ لوبو نے 10 جنوری (پیر) کو بی جے پی سے استعفیٰ دینے کے بعد کہا تھا کہ گوا میں بی جے پی اپنے کور پارٹی کارکنان کو نظر انداز کر رہی ہے اور اس کا نقصان اس کو اٹھانا پڑے گا۔


مائیکل لوبو نے بی جے پی کے ساتھ اپنے سیاسی سفر کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ ’’بی جے پی کے ساتھ میرا کافی اچھا، طویل سفر رہا ہے۔ بی جے پی کارکنان پارٹی سے ناخوش ہیں۔ شاید میں غلط بھی ہو سکتا ہوں۔ میں نے اپنی آنکھوں سے جو دیکھا ہے، اپنے کانوں سے جو سنا ہے، وہی کہہ رہا ہوں۔‘‘ انھوں نے پہلے بھی کہا تھا کہ سابق وزیر اعلیٰ منوہر پاریکر کے انتقال کے بعد بی جے پی الگ طریقے سے چلنے لگی ہے جس میں کارکنان کو نظر انداز کیا جا رہا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔