کشمیر: لاوے پورہ تصادم سے متعلق حقائق مناسب وقت پر سامنے لائیں گے، منوج سنہا

منوج سنہا نے کہنا تھا کہ جموں و کشمیر ایک حساس یونین ٹریٹری ہے۔ فورسز کا حوصلہ پست نہ ہو اس کو ذہن میں رکھنے کی ضرورت ہے۔ میں خود معاملے کو دیکھ رہا ہوں۔ وقت پر آپ کو مناسب جواب دیا جائے گا۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

جموں: جموں و کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے کہا کہ سری نگر کے مضافاتی علاقہ لاوے پورہ میں گزشتہ ہفتے ہونے والے مل ٹنٹ مخالف آپریشن سے متعلق حقائق کو مناسب وقت پر سامنے لایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر ایک 'حساس یونین ٹریٹری' ہے اور سیکورٹی فورسز کا حوصلہ پست نہ ہو اس کو ذہن میں رکھنے کی ضرورت ہے۔

لیفٹیننٹ گورنر نے جمعرات کو یہاں ایک نیوز کانفرنس کے دوران لاوے پورے تصادم سے متعلق ایک سوال کے جواب میں کہا کہ 'میں نہیں چاہتا تھا کہ آج اس طرح کے معاملوں پر بات کروں۔ لیکن ایک بات میں پوری ذمہ داری سے پہنچانا چاہتا ہوں کہ اگر کوئی کوتاہی ہوئی ہے تو ضرور کارروائی ہوگی'۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ 'جموں و کشمیر ایک حساس یونین ٹریٹری ہے۔ فورسز کا حوصلہ پست نہ ہو اس کو ذہن میں رکھنے کی ضرورت ہے۔ تمام متعلقین کے بیانات ہم تک پہنچی ہیں۔ میں خود معاملے کو دیکھ رہا ہوں۔ وقت پر آپ کو مناسب جواب دیا جائے گا'۔

بتادیں کہ گزشتہ برس 30 دسمبر کو ہونے والے لاوے پورہ تصادم میں سیکورٹی فورسز نے تین ملی ٹنٹوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ہے جنہیں سونہ مرگ میں سپرد خاک کیا گیا۔ تاہم مہلوکین کے اہل خانہ کا دعویٰ ہے کہ مارے گئے نوجوان بے قصور تھے اور وہ ان کی لاشوں کی واپسی نیز معاملے کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کا مطالبہ کر رہے ہیں۔

مہلوک نوجوانوں کی شناخت اعجاز احمد گنائی، اطہر مشتاق اور زبیر احمد کے بطور ہوئی تھی۔ فوج کا کہنا ہے کہ مہلوکین ملی ٹنٹ تھے جو قومی شاہراہ پر ایک بڑی کارروائی انجام دینے کا منصوبہ بنا رہے تھے۔ پولیس نے مہلوکین کے بارے میں جاری اپنے بیان میں کہا تھا کہ مہلوکین میں سے دو ملی ٹنٹوں کے اعانت کار تھے جبکہ تیسرے نے ممکنہ طور ملی ٹنٹوں کی صفوں کی شمولیت کی تھی۔

جموں و کشمیر کی بیشتر علاقائی سیاسی جماعتوں بشمول نیشنل کانفرنس، پی ڈی پی، اپنی پارٹی، سی پی آئی (ایم) نے اس واقعے میں تحقیقات کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔ جہاں پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی نے جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کے نام ایک مکتوب روانہ کیا ہے جس میں ان سے اس واقعے میں غیر جانبدارانہ تحقیقات کرانے کا مطالبہ کیا گیا ہے وہیں نیشنل کانفرنس کا کہنا ہے کہ انہیں موصوف لیفٹیننٹ گورنر نے اس واقعے میں تحقیقات کرانے کی یقین دہانی کی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔