اتراکھنڈ میں کیجریوال نے کی وعدوں کی بوچھاڑ، 6 مہینے میں ایک لاکھ نوکریاں، 5 ہزار روپے مہینہ بیروزگاری بھتہ

اروند کیجریوال نے کہا کہ آج اتراکھنڈ کے نوجوان بہت زیادہ دکھی ہیں۔ ہر نوجوان کو روزگار چاہیے، وہ بھیک نہیں مانگ رہے بلکہ یہ ان کا حق ہے۔

اتراکھنڈ میں کیجریوال
اتراکھنڈ میں کیجریوال
user

قومی آوازبیورو

دہرہ دون: دہلی کے وزیر اعلیٰ اور عام آدمی پارٹی کے کنوینر اروند کیجریوال نے اتوار کے روز ہلدوانی کا انتخابی دورہ کیا اور اتراکھنڈ کے عوام سے بے شمار وعدے کئے۔ اس دوران کیجریوال نے کہا کہ اگر ریاست میں عام آدمی پارٹی کی حکومت بنی تو ہر گھر میں روزگار کو یقینی بنائیں گے۔ حکومت قائم ہونے کے 6 مہینے کے اندر ایک لاکھ نوکریاں دی جائیں گی۔ روزگار ملنے تک ہر مہینے 5 ہزار روپے کا بھتہ دیا جائے گا۔ نوکریوں میں اتراکھنڈ کے باشندگان کو 80 فیصد ریزرویشن دیا جائے گا۔

ہلدوانی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ کیجریوال نے کہا کہ اتراکھنڈ کے قیام کو 21 سال ہو چکے ہیں اور ان 21 سالوں میں سیاسی جماعتوں نے اتراکھنڈ کا براحال کرنے میں کوئی کسر باقی نہیں رکھی۔ پہاڑ، جنگل سب لوٹ لئے۔ گزشتہ کچھ دنوں اور مہینوں سے 21 سالوں کی ابتر حالات کو 21 مہینوں میں ٹھیک کرنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں۔


انہوں نے کہا اتراکھنڈ کے لوگوں کے ساتھ مل کر انہوں نے کئی منصوبے بنائے ہیں۔ پہلا منصوبہ بجلی کے حوالہ سے ہے۔ جیسے ہم نے دہلی میں کر دکھایا کہ تقریباً 73 فیصد لوگوں کو مفت بجلی مل رہی ہے۔ ایسے ہی اتراکھنڈ میں 24 گھنٹے 300 یونٹ بجلی مفت فراہم کریں گے۔

کیجریوال نے کہا، ’’آج دیو بھومی میں نوجوانوں کے درد کے بارے میں بات کرنے آیا ہوں۔ اتراکھنڈ کے نوجوان کو جب بھی موقع ملا اس نے غضب کا کام کرکے دکھایا، لیکن گزشتہ 24 سالوں میں انہوں نے اتراکھنڈ کا برا حال کر دیا ویسا ہی برا حال نوجوانوں کا ہے۔ آج اتراکھنڈ کے نوجوانوں کا سب سے بڑا مسئلہ نقل مکانی ہے۔


انہوں نے کہا کہ ’’آج اتراکھنڈ کے نوجوان بہت زیادہ دکھی ہیں۔ ہر نوجوان کو روزگار چاہیے، وہ بھیک نہیں مانگ رہے بلکہ یہ ان کا حق ہے۔ اگر آپ بی جے پی کو ووٹ دیں گے تو ہر مہینے ایک نیا وزیر اعلیٰ ملے گا جبکہ اگر آپ عام آدمی پارٹی کو ووٹ دیں گے تو 5 سال کے لئے مستقل وزیر اعلیٰ ملے گا، جو آپ کے بچوں کو روزگار فراہم کرے گا۔‘‘

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔