جموں و کشمیر: بڑھتے کورونا کیسز کے سبب تمام اسپتالوں میں معمول کی جراحیاں موخر

صوبائی کمشنر جموں کی طرف سے جاری حکمنامے میں کہا گیا ہے کہ کورونا کیسز میں ہو رہے اضافے کے پیش نظر صوبہ جموں کے تمام اسپتالوں میں معمول کی جراحیوں کو موخر کیا جا رہا ہے۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

سری نگر: کورونا کیسز و اموات میں ہو رہے غیر معمولی اضافے کے پیش نظر حکام نے جموں و کشمیر کے تمام سرکاری و غیر سرکاری اسپتالوں میں معمول کی جراحیوں کو مؤخر کرنے کا اعلان کیا ہے۔ تاہم ایمرجنسی خدمات چالو رہیں گی، نیز موذی مرض میں مبتلا مریضوں کا علاج بھی معمول کی طرح جاری رہے گا۔

صوبائی کمشنر جموں کی طرف سے جاری حکمنامے میں کہا گیا ہے کہ کورونا کیسز میں ہو رہے اضافے کے پیش نظر صوبہ جموں کے تمام اسپتالوں میں معمول کی جراحیوں کو مؤخر کیا جا رہا ہے۔ حکمنامے میں ضلع مجسٹریٹوں اور چیف میڈیکل افسروں سے کہا گیا ہے کہ وہ اس حکمنامے کی عمل آوری کو یقینی بنائیں۔ ایسا ہی ایک حکمنامہ صوبائی کمشنر کشمیر پی کے پولے نے بھی جاری کیا ہے۔


بتا دیں کہ ملک کے ساتھ ساتھ جموں وکشمیر میں بھی کورونا کی دوسری لہر تیزی سے پھیل رہی ہے جس کے باعث مثبت کیسز اور اموات میں روز افزوں اضافہ درج ہو رہا ہے۔ جموں وکشمیر انتظامیہ کورونا کے پھیلاؤ کی روک تھام کے لئے مختلف النوع اقدام کر رہی ہے اور یونین ٹریٹری کے چار اضلاع میں مکمل لاک ڈاؤن نافذ ہے جبکہ باقی اضلاع میں بھی جزوی لاک ڈاؤن جاری ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔