’بی جے پی اقتدار نہیں چلا پا رہی تو کانگریس کے حوالے کر دے‘، سلمان خورشید کا طنز

سابق مرکزی وزیر سلمان خورشید کا کہنا ہے کہ گزشتہ دو برسوں سے اہل وطن کورونا سے پریشان ہیں، اس عالمی وبا کے دوران مرکزی حکومت کی غلط پالیسیوں اور بدانتظامی کی وجہ سے سینکڑوں لوگوں نے اپنی جان گنوائی۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

رانچی: کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق مرکزی وزیر سلمان خورشید نے مرکز کی نریندر مودی حکومت پر طنز کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر بی جے پی صحیح طریقہ سے اقتدار نہیں چلا پارہی ہے تو وہ کانگریس کو اقتدار ہینڈ اوور کردے تاکہ کانگریس پارٹی یہ بتا سکے کہ اس بحران کے وقت میں بھی اہل وطن کو کس طرح سے فائدہ پہنچایا جاسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس کی قیادت والی یو پی اے-ایک اور دو میں ملک کے 27 کروڑ لوگوں کو خط افلاس سے اوپر اٹھایا گیا اور یہ تمام کنبے درمیانہ طبقہ کے زمرے میں آئے، لیکن مرکزکی موجودہ نریندر مودی حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے 23 کروڑ افراد پھر سے خط افلاس سے نیچے چلے گئے۔

سلمان خورشید نے ہفتہ کے روز رانچی میں منعقدہ پریس کانفرنس میں کہاکہ مرکزی حکومت کی پالیسیاں نہ صرف غریبی میں اضافہ کررہی ہیں بلکہ اس کا خراب اثر روزگار پر بھی پڑرہا ہے۔ اپریل اور مئی 2021 میں ملک میں دو کروڑ روزگار ختم ہوگئے، 97 فیصد لوگوں کی مزدوری کم ہوگئی ہے۔ انہوں نے کہاکہ ملک میں غریبوں کی تعداد اور بے روزگار ی میں اضافہ ہوا ہے، دوسری طرف بڑھتی مہنگائی نے عام لوگوں کی کمر توڑ دی ہے۔


سلمان خورشید نے اپنی بات کو آگے بڑھاتے ہوئے کہا کہ مہنگائی کی شرح میں اضافہ کو آر بی آئی چار فیصد تک موافق مانتا ہے لیکن مئی اور جون میں یہ اعدادو شمار بالترتیب 5.91 اور 6.37 فیصد ہوگئی۔ تھوک مہنگائی کی شرح کا اعداد و شمار بھی چار فیصد کے ہدف سے اوپر 5.5فیصد ہوگیا۔ سابق مرکزی وزیر نے کہاکہ گزشتہ دو برسوں سے اہل وطن کورونا انفیکشن سے پریشان ہیں۔ اس عالمی وبا کے دوران مرکزی حکومت کی غلط پالیسیوں اور بدانتظامی کی وجہ سے سینکڑوں لوگوں نے اپنی جان گنوائی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔