پنجاب میں ٹکٹ خرید-فروخت کرنے والے کا جہنم تک تعاقب کروں گا اور جیل بھیج کر رہوں گا: کیجریوال

اروند کیجریوال نے کہا کہ کئی مخالف جماعتیں الزام عائد کر رہی ہیں کہ عآپ پیسے لے کر ٹکٹ بانٹ رہی ہے، اگر کوئی یہ ثابت کر دے تو وہ 24 گھنٹے میں ٹکٹ خریدنے اور بیچنے والے کو پارٹی سے نکال باہر کر دیں گے۔

وزیر اعلیٰ دہلی اروند کیجریوال / آئی اے این ایس
وزیر اعلیٰ دہلی اروند کیجریوال / آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: عام آدمی پارٹی (عآپ) کے کنوینر اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے پنجاب اسمبلی انتخابات کے ٹکٹ فروخت کرنے کے الزامات کے بعد بدھ کے روز دعویٰ کیا ہے کہ اگر الزامات ثابت ہو گئے تو وہ بدعنوان شخص کو جیل بھیج کر رہیں گے۔ اروند کیجریوال نے کہا کہ کئی مخالف جماعتیں الزام عائد کر رہی ہیں کہ عآپ پیسے لے کر ٹکٹ بانٹ رہی ہے، اگر کوئی یہ ثابت کر دے تو وہ 24 گھنٹے میں ٹکٹ خریدنے اور بیچنے والے کو پارٹی سے نکال باہر کر دیں گے۔

ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے پنجاب کے لوگوں سے خطاب کرتے ہوئے کیجریوال نے کہا کہ ’’میں کچھ بھی برداشت کر سکتا ہوں، بدعنوانی برداشت نہیں کر سکتا! ٹکٹ کس نے بیچا ہے ثابت تو کریں۔ میں ان کا جہنم تک تعاقب کروں گا، جیل بھیجوں گا، میں انہیں نہیں چھوڑوں گا۔ حق کی راہ پر چلنے والوں پر لوگ کیچڑ اچھالتے ہیں۔ اگر الزام لگانے والے نے یہ ثابت نہیں کیا کہ عآپ میں ٹکٹ فروخت کیا گیا ہے تو میں اسے بھی جیل بھیج کر رہوں گا۔‘‘


خیال رہے کہ پنجاب اسمبلی انتخابات میں ٹکٹوں کی تقسیم کے بعد عآپ اپنے ہی کارکنوں کے نشانے پر ہے۔ پارٹی کارکنوں نے پنجاب انچارج راگھو چڈھا اور اروند کیجریوال پر دوسری جماعتوں سے شامل ہوئے لوگوں کو امیدوار بنانے کے لئے ٹکٹ بیچنے کا الزام لگایا تھا۔ تاہم راگھو چڈا نے ان الزامات کی تردید کی ہے اور کہا ہے کہ عام آدمی پارٹی ایک ایماندار پارٹی ہے۔

اس سے پہلے شرومنی اکالی دل کے صدر سکھبیر سنگھ بادل نے بھی پیر کے روز الزام عائد کیا تھا کہ عآپ نے پنجاب میں پیسے لے کر ٹکٹ بیچے ہیں، اس وجہ سے کسانوں کی تنظیم نے بھی ان کے ساتھ اتحاد نہیں کیا۔ بادل نے کہا کہ اب کسان تنظیموں کی قیادت کرنے والے بلبیر سنگھ راجیوال کو عام آدمی پارٹی کے ان لیڈروں کے ناموں کو عام کرنا چاہئے جو پنجاب میں پیسے لے کر ٹکٹ دینے میں لگے ہوئے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔