عوامی اشتعال سے خائف بی جے پی لیڈروں کی زبان ابھی مزید ناشائستہ ہوگی: اکھلیش

اکھلیش نے موریہ کے جالی دار ٹوپ اور لنگی والے بیان پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ مجھے کسی کے بیان پر کچھ نہیں کہنا ہے۔ جہاں تک پہناوے کی بات ہے بی جے پی ایسی ہی ناشائستہ زبان بولتی رہے گی۔

تصویر @samajwadiparty
تصویر @samajwadiparty
user

یو این آئی

لکھنؤ: سماج وادی پارٹی (ایس پی) سربراہ اکھلیش یادو نے کہا کہ حکمراں جماعت بی جے پی کے خلاف عوام میں زبردست اشتعال سے خائف یوگی حکومت کے وزراء اور بی جے پی لیڈروں کی زبان انتخابات کے نزدیک آنے کے ساتھ ہی ابھی مزید ناشائستہ ہوگی، اکھلیش نے اتوار کو ایس پی کارکنؤں سے گونڈوانا سائیکل یاترا کو روانہ کرنے کے بعد میڈیا نمائندوں کے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ حواس باختہ بی جے پی لیڈروں کی زبان ابھی اور گندی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ گونڈوانا گڑتنتر پارٹی کی سائیکل یاترا گاؤں گاؤں جاکر یوگی حکومت کی ناکامیوں سے لوگوں کو آگاہ کرے گی۔

اترپردیش کے نائب وزیر اعلی کیشوپرساد موریہ کے خاص کمیونٹی کے لوگوں کو نشانہ بنانے والے بیان کی جانب اشارہ کرتے ہوئے اکھلیش نے کہا کہ بی جے پی صرف نفرت کی سیاست کر کے سماج میں لوگوں کے درمیان ذات اور مذہب کی بنیاد پر کھائی پیدا کر رہی ہے۔ اکھلیش نے موریہ کے جالی دار ٹوپ اور لنگی والے بیان پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ مجھے کسی کے بیان پر کچھ نہیں کہنا ہے۔ جہاں تک پہناوے کی بات ہے بی جے پی ایسی ہی ناشائستہ زبان بولتی رہے گی۔ انتخابات جیسے جیسے قریب آئیں گے بی جے پی لیڈروں کے زبان خراب سے خراب تر ہوتی جائے گی۔


موریہ کا نام لئے بغیر اکھلیش یادو نے طنز کستے ہوئے یہ ضرور کہا کہ جنہیں حکومت میں بٹھانے کے لئے کرسی اور اسٹول تک نہیں ملا ہے۔ جن کی نام کی تختی اکھاڑ کر پھنک دی گئی ہے وہ لوگ ایسی زبان کا استعمال کر رہے ہیں۔ انہوں نے(موریہ) وزیر اعلی کا پہناوا نزدیک سے دیکھا ہوگا اس لئے ایسی باتیں بول رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کیشو موریہ جی کا جھگڑا اپوزیشن سے نہیں ہے ان کا جھگڑا اپنے اندر کے لوگوں کے ساتھ ہے۔ بی جے پی کے اندر کے لوگوں سے ہی ان کا جھگڑا ہے۔ اکھلیش نے حال ہی میں بجنور میں بی جے پی ایم ایل اے کے ذریعہ ایک سڑک حادثے میں ناریل پھوڑتے وقت ناریل کے بجائے سرک ٹوٹنے کے واقعہ کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی سے پوچھئے ناریل کا ٹوٹنا مبارک ہوتا ہے یا پھر سڑک کا ٹوٹنا مبارک ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج اگر بی جے پی لیڈروں سے کاروباریوں کی آمدنی کے بارے میں پوچھا جائے گا تو ان کے پاس کوئی جواب نہیں ہے۔ بے روزگاری پر اگر کوئی سوال کرے گا تو وہ کوئی جواب نہیں دے پائیں گے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔