کورونا وائرس: 24 گھنٹوں کے دوران 391 لوگوں کی موت، 32981 نئے کیس رپورٹ

ملک میں زیر علاج مریضوں کی شرح کم ہوکر 4.10 فیصد ہوگئی ہے اور بازیابی کی شرح بڑھ کر 94.45 ہوگئی ہے جبکہ اموات کی شرح اب بھی 1.45 فیصد ہے۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

نئی دہلی: کورونا کو شکست دینے اور انفیکشن کی رفتار کو سست کرنے والے لوگوں کی تعداد میں مسلسل اضافے کی وجہ سے ملک میں زیرعلاج مریضوں کی تعداد چار لاکھ سے کم ہوچکی ہے۔ صحت و خاندانی بہبود کی مرکزی وزارت کی طرف سے پیر کو جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 32981 نئے کیس رپورٹ ہوئے جن میں انفیکشن کی کل تعداد 9677203 ہوگئی۔ اس عرصے کے دوران 39109 مریض صحت مند ہوگئے اور کورونا کو شکست دینے والوں کی تعداد تقریباً 91.40 لاکھ تھی۔ نئے معاملوں کے مقابلے میں کورونا سے صحت مند ہونے والے لوگوں کی تعداد میں اضافے کی وجہ سے زیر علاج مریضوں کی تعداد 6519 سے کم ہو کر 3.97 لاکھ ہوگئی ہے۔ اسی عرصے میں 391 مریضوں کی موت کے ساتھ اموات کی تعداد بڑھ کر 140573 ہوگئی ہے۔

ملک میں زیر علاج مریضوں کی شرح کم ہوکر 4.10 فیصد ہوگئی ہے اور بازیابی کی شرح بڑھ کر 94.45 ہوگئی ہے جبکہ اموات کی شرح اب بھی 1.45 فیصد ہے۔ مہاراشٹر میں پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران زیادہ سے زیادہ 2769 مریض صحت مند ہوگئے اور 40 افراد کی موت ہوگئی۔ ریاست میں زیر علاج مریضوں کی تعداد 81162 ہوگئی ہے۔ ہلاکتوں کی تعداد بڑھ کر 47734 ہوگئی ہے، جبکہ اب تک 17.23 لاکھ افراد کورونا کو شکست دے چکے ہیں۔

کیرالہ میں صحت مند مریضوں کی تعداد 5.72 لاکھ کو عبور کر چکی ہے اور فعال معاملے کم ہو کر 61063 ہوچکے ہیں جبکہ 2418 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران قومی دارالحکومت دہلی میں زیر علاج مریضوں کی تعداد 1985 سے کم ہو کر 24693 ہوگئی، حالانکہ اس عرصے کے دوران ملک میں سب سے زیادہ اموات ہوئی ہیں جن کی تعداد 69 تھی۔ اس بیماری سے اب تک 9643 افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں، جبکہ 5.57 لاکھ سے زیادہ مریض صحت مند ہوچکے ہیں۔

جنوبی ریاست کرناٹک میں کورونا کے فعال مریضوں کی تعداد 422 بڑھ کر 25400 ہوگئی ہے۔ ریاست میں اموات کی تعداد 11856 تک جا پہنچی ہے اور اب تک 8.55 لاکھ سے زیادہ افراد بازیاب ہوچکے ہیں۔ اس مدت کے دوران آندھرا پردیش میں فعال مریضوں کی تعداد 256 سے کم ہو کر 5910 ہوگئی۔ ریاست میں ابھی تک 7033 افراد کورونا کی وجہ سے ہلاک ہوچکے ہیں اور 8.59 لاکھ سے زیادہ افراد انفیکشن سے صحت یاب ہوچکے ہیں۔ ملک کی سب سے بڑی ریاست اتر پردیش میں فعال معاملوں کی تعداد 85 سے گھٹ کر 22160 ہوگئی ہے اور اس وبا کی وجہ سے 7924 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ ریاست میں اب تک 5.24 لاکھ مریض صحت مند ہوچکے ہیں۔

تمل ناڈو میں سرگرم معاملوں کی تعداد 10688 ہوگئی ہے اور اب تک 11793 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ ریاست میں اب تک 7.67 لاکھ سے زیادہ افراد انفیکشن سے صحت مند ہوچکے ہیں۔ اوڈیشہ میں فعال مریضوں کی تعداد 3585 ہوگئی ہے اور 1771 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں جبکہ بیماری سے صحت مند مریضوں کی تعداد 3.15 لاکھ کو عبور کرچکی ہے۔

تلنگانہ میں کورونا کے فعال معاملے کم ہوکر 7778 ہو گئے ہیں اور 1474 افراد ہلاک ہوگئے ہیں جبکہ اس وبا سے 2.64 لاکھ سے زائد افراد بازیاب ہوئے ہیں۔ مغربی بنگال میں کورونا کے سرگرم معاملات کم ہوکر 23894 رہ گئے ہیں اور 8723 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ ریاست میں اب تک 4.70 لاکھ سے زیادہ افراد بازیاب ہوئے ہیں۔ پنجاب میں سرگرم کیسوں کی تعداد بڑھ کر 7896 ہوگئی ہے اور انفکشن سے نجات پانے والے افراد کی تعداد بڑھ کر 1.43 لاکھ سے زیادہ ہوگئی ہے جبکہ اب تک 4916 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

مدھیہ پردیش میں فعال معاملات کی تعداد 13391 ہوگئی ہے اور اب تک 1.97 لاکھ سے زیادہ افراد صحت مند ہوچکے ہیں جبکہ اس بیماری کی وجہ سے 3337 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔ گجرات میں 14695 فعال معاملے ہیں اور 4081 افراد ہلاک ہوگئے ہیں اور دو لاکھ سے زیادہ افراد بھی اس بیماری سے بازیاب ہوئے ہیں۔ بہار میں سرگرم معاملوں کی تعداد 6763 ہوگئی ہے۔ ریاست میں کورونا کی وجہ سے 1295 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں جبکہ 2.31 لاکھ سے زیادہ افراد انفیکشن سے صحت یاب ہوچکے ہیں۔

ابھی تک کورونا کی وبا سے چھتیس گڑھ میں 2989، ہریانہ میں 2588، راجستھان میں 2429، جموں و کشمیر میں 1746، اتراکھنڈ میں 1285، آسام میں 993،جھارکھنڈ میں986، ہماچل پردیش میں 732، گوا میں 698، پدوچیری میں 614، تری پورہ میں 375،منی پور میں 306، چنڈی گڑھ میں 291، لداخ میں 120، میگھالیہ میں 120، سکم میں 115، ناگالینڈ میں 66، انڈمان اور نیکوبار جزیرے میں 61، اروناچل پردیش میں 55 اور دادر نگر حویلی اور دمن دیو میں دو۔ موت واقع ہوئی ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔