کانگریس کا نظریہ میرے جسم اور خاندان کے خون میں ہے: ارون یادو

ارون یادو نے لکھا کہ میرے جسم اور خانداد کے خون کی ایک ایک بوند میں کانگریس کا نظریہ ہے، میرے سمیت پورے خاندان کے نام کے سامنے ’یادو‘ لکھا ہے، ’سندھیا‘ نہیں۔ علیحدگی پسند قوتوں کو منہ کی کھانی پڑے گی۔

ارون یادو / ٹوئٹر
ارون یادو / ٹوئٹر
user

یو این آئی

بھوپال: کانگریس کے سینئر لیڈر اور مدھیہ پردیش کانگریس کے سابق صدر ارون یادو نے کہا ہے کہ ان کے جسم اور خاندان کے خون کے ایک ایک قطرے میں کانگریس کا نظریہ موجود ہے۔ ارون یادو نے ان کے بارے میں سیاسی گلیاروں میں ان دنوں کی جا رہی قیاس آرائیوں کے درمیان ایک ٹوئٹ کے ذریعے یہ بات کہی۔ سابق مرکزی وزیر ارون یادو نے لکھا ’’میرے جسم اور خانداد کے خون کی ایک ایک بوند میں کانگریس کا نظریہ ہے، میرے سمیت پورے خاندان کے نام کے سامنے ’یادو‘ لکھا ہے، ’سندھیا‘ نہیں۔ علیحدگی پسند قوتوں کو منہ کی کھانی پڑے گی۔‘‘

دراصل ریاست میں مستقبل قریب میں ہونے والے کھنڈوا لوک سبھا ضمنی انتخابات کے لیے ارون یادو کو مضبوط دعویدار سمجھا جاتا ہے اور وہ ضمنی انتخابات کی تیاریوں میں مصروف ہیں لیکن کچھ لوگ ان کے دعوے کو مبینہ طور پر چیلنج کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ دریں اثنا، سیاسی گلیاروں میں قیاس آرائیاں کی جا رہی تھیں کہ ارون یادو بھی سندھیا (جیوترادتیہ سندھیا) کے نقش قدم پر چلیں گے۔ ارون یادو کھنڈوا سے رکن پارلیمنٹ رہے ہیں اور ان کے والد اور آنجہانی کانگریس لیڈر سبھاش یادو نائب وزیر اعلیٰ کے عہدے تک پہنچے تھے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔