بہار: نئی نویلی دلہن کو مکھیا بنا کر لوگوں نے دیا شادی کا تحفہ

بہار میں ایسے تو پنچایت الیکشن 11 مراحل میں ہو رہے ہیں، لیکن مرحلہ وار ووٹ شماری کا کام بھی جاری ہے، ایسے میں ساتویں مرحلہ کے انتخاب میں ووٹنگ کے بعد بیشتر نتائج برآمد ہو چکے ہیں۔

نیرا کماری، تصویر آئی اے این ایس
نیرا کماری، تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

بہار میں ایسے تو پنچایت الیکشن 11 مراحل میں ہو رہے ہیں، لیکن مرحلہ وار ووٹ شماری کا کام بھی جاری ہے۔ ایسے میں ساتویں مرحلہ کے انتخاب میں ووٹنگ کے بعد بیشتر نتائج برآمد ہو چکے ہیں۔ اس الیکشن میں ووٹر مکھیا عہدہ کے لیے نئے چہروں کو زیادہ پسند کر رہے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ بیشتر پرانے مکھیا الیکشن ہار رہے ہیں۔

گوپال گنج کے کچایکوٹ ڈویژن کے 31 پنچایتوں میں بیشتر سیٹوں پر نئے چہرے کو جیت ملی ہے۔ ان میں سے ایک نئی نویلی دلہن بھی مکھیا بنی ہے۔ کچایل کوٹ کے بنکا پنچایت کی نومنتخب مکھیا نیرا کماری کی شادی الیکشن کے دوران ہوئی تھی۔ ہاتھ کی مہندی کے رنگ پھیکے بھی نہیں پڑے تھے کہ انھوں نے مکھیا عہدہ کے لیے نامزدگی داخل کی اور لوگوں نے بھی انھیں جتا کر شادی کا تحفہ دے دیا۔


دیہی عوام کے مطابق گوپال گنج کے چوکیدار-دفعدار پنچایت ایسو سی ایشن کے ضلع صدر دیناناتھ مانجھی نے اتر پردیش کی رہنے والی اپنی بیوی رام سواری دیوی کو پنچایت الیکشن میں امیدوار بنانے کا منصوبہ بنایا تھا۔ اسی دوران انھیں جانکاری ملی کہ الیکشن کمیشن کے ضوابط کے مطابق انھیں ریزرویشن کا فائدہ نہیں ملے گا۔ اس ضابطہ کے بارے میں پتہ چلنے کے بعد ان کے خواب ٹوٹتے نظر آئے، لیکن انھوں نے ہمت نہیں ہاری۔ اس الیکشن میں دیناناتھ نے اپنے رشتہ داروں کو پنچایت الیکشن لڑنے کے لیے حوصلہ بڑھایا۔ یہی وجہ ہے کہ اس نے فوراً اپنی بیوی کے بدلے اپنے بیٹے ارون مانجھی کی شادی کرنے کا منصوبہ بنایا اور اس کی بیوی کو امیدوار بنانے کا فیصلہ کیا۔

گاؤں کے لوگ بتاتے ہیں کہ مانجھی نے فوراً اُچکاگاؤں ڈویژن کے بھولا میں اپنے ایک دور کے رشتہ دار کے یہاں اپنے بیٹے ارون کی شادی طے کر دی اور 23 اکتوبر کو مقامی مندر میں ارون اور نیرا رشتۂ ازدواج میں منسلک ہو گئے۔ نیرا کو بہو بناتے ہی انھوں نے مکھیا عہدہ کے لیے اس کی نامزدگی درج کروا دی۔


نیرا خود بتاتی ہیں کہ ان کی شادی بغیر لگن اور ڈھول شہنائی کے ہوئی۔ مندر میں شادی ہوئی اور انتخابی میدان میں اتر گئی۔ حالانکہ ان کو سکون ہے کہ یہاں کے لوگوں نے انھیں مایوس نہیں کیا اور ذمہ داری کے ساتھ شادی کا بیش قیمتی تحفہ دے دیا۔ بنکٹا پنچایت کی عوام نے نیرا پر بھروسہ ظاہر کیا اور مکھیا چن لیا۔ الیکشن میں کامیاب ہونے کے بعد نیرا بھی کہتی ہیں کہ یہاں کے لوگوں کا بھروسہ کبھی نہیں توڑیں گی۔

دیہی عوام بھی نیرا کی کامیابی سے پرجوش ہیں۔ سنتوش مشر کہتے ہیں کہ دیناناتھ مانجھی نے اپنی پوری زندگی سماج کی خدمت میں لگا دی۔ پنچایت کی عوام نے انھیں تحفہ دیا ہے۔ انھوں نے بھروسہ ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ نیرا کو پنچایت کی کمان ملنے سے ترقی کو نئی رفتار ملنے کا امکان ہے۔ بنکٹا کی عوام نے نوجوان کے ہاتھ میں ترقی کی کمان سونپی ہے۔


قابل ذکر ہے کہ کچایکوٹ ڈویژن میں 15 نومبر کو ووٹنگ ہوئی۔ بدھ کو تھاوے واقع ڈایٹ بھون میں ووٹوں کی گنتی ہوئی جس میں نیرا کماری کو مجموعی طور پر 2356 ووٹ ملے، جب کہ ان کی حریف امیدوار کلدیا دیوی کو محض 588 ووٹوں سے ہی اکتفا کرنا پڑا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔