پیاز کی قیمتوں پر تیجسوی کا مودی-نتیش پر حملہ، پوچھا- ’منہ میں دہی کیوں جمی ہے؟‘

تیجسوی یادو نے مہنگائی کے معاملے پر بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار اور مرکز میں مودی حکومت پر حملہ کیا اور سوال پوچھا کہ وہ بڑھتی مہنگائی پر خاموش کیوں ہیں، ان کے منہ میں دہی کیوں جمی ہوئی ہے؟'‘

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: بہار اسمبلی انتخابات میں مہا گٹھ بندھن کی جانب سے وزیر اعلیٰ عہدے کے دعویدار تیجسوی یادو انتخابات میں مہنگائی، بیروزگاری اور بدحال معیشت کا مسئلہ اٹھا رہے ہیں۔ پیاز کی قیمتیں پورے ملک میں 100 روپے فی کلو گرام سے تجاوز کر گئی ہیں۔ کئی شہروں میں تو پیاز کی قیمتیں 140 سے 150 روپے فی کلو تک پہنچ چکی ہیں۔ اس معاملہ پر تیجسوی یادو نے پیر کے روز مرکزی حکومت پر حملہ بولا۔ ساتھ ہی انہوں نے بھارتیہ جنتا پارٹی پر طنز بھی کیا۔

پیاز کی آسامان چھوتی قیمتوں کی مخالفت کرنے والے تیجسوی یادو میڈیا کے سامنے احتجاج کے طور پر پیاز کی مالا گلے میں پہنے ہوئے تھے۔ رپورٹ کے مطابق انہوں نے کہا کہ ’’مہنگائی سب سے بڑا مسئلہ ہے۔ بی جے پی کے لوگ پیاز کی مالا پہنتے تھے۔ اب یہ 100 روپے فی کلوگرام کے قریب پہنچ رہی ہے۔ بے روزگاری ہے، فاقہ کشی میں اضافہ ہو رہا ہے، چھوٹے تاجر تباہ ہو رہے ہیں، غربت بڑھ رہی ہے، جی ڈی پی گرتی جارہی ہے۔ ہم معاشی بحران سے گزر رہے ہیں۔‘‘

تیجسوی یادو نے مہنگائی کے معاملے پر بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار اور مرکز میں مودی حکومت پر حملہ کیا اور سوال پوچھا کہ وہ بڑھتی مہنگائی پر خاموش کیوں ہیں، ان کے منہ میں دہی کیوں جمی ہوئی ہے؟'‘ نتیش کمار کے تبصروں پر جب سوال پوچھے گئے تو تیجسوی یادو نے کہا کہ ہمیں لگتا ہے کہ نتیش جی کا ’آشیرواد‘ انہیں مل رہا ہے۔

خیال رہے کہ ملک بھر میں پیاز کی قیمتوں میں اچانک اضافہ ہوا ہے۔ دہلی میں پیاز 80 سے 100 روپے فی کلو تک فروخت ہو رہی ہے۔ وہیں، چنئی میں پیاز 105 سے 150 روپے فی کلو تک دستیاب ہے۔ دہلی کی بڑی ہول سیل مارکیٹوں میں پیاز 60 روپے فی کلو فروخت ہو رہی ہے۔ پیاز کے تاجروں کا کہنا ہے کہ بارش کی وجہ سے مہاراشٹرا اور مدھیہ پردیش میں پیاز کی فصل کو نقصان پہنچا ہے۔ اس کی وجہ سے پیاز منڈیوں تک نہیں پہنچ رہی ہے جس کی وجہ سے قیمتوں میں اضافہ ہو رہا ہے۔ تاجروں نے پیش گوئی کی ہے کہ ایک ماہ تک صورتحال ایسی ہی رہے گی۔

تاہم، مرکزی وزیر پیوش گوئل جو صارفین کی وزارت کا اضافی چارج دیکھ رہے ہیں، نے ہفتے کے روز کہا کہ حکومت نے صارفین کو سستی قیمت پر پیاز کی فراہمی کے لئے متعدد اقدامات کیے ہیں۔ ان میں پیاز کی برآمد پر پابندی سے لے کر درآمد کے قواعد میں نرمی اور بفراسٹاک سے پیاز کی سپلائی شامل ہے۔

next