'بھارت جوڑو یاترا' 10 جنوری کو پنجاب میں داخل ہوگی

کانگریس لیڈر راہل گاندھی کی کنیا کماری سے شروع ہونے والی 'بھارت جوڑو یاترا' 10 جنوری کو پنجاب میں داخل ہوگی۔

<div class="paragraphs"><p>بھارت جوڑو یاترا / ٹوئٹر</p></div>

بھارت جوڑو یاترا / ٹوئٹر

user

یو این آئی

چنڈی گڑھ: کانگریس لیڈر راہل گاندھی کی کنیا کماری سے شروع ہونے والی 'بھارت جوڑو یاترا' 10 جنوری کو پنجاب میں داخل ہوگی۔ پارٹی کے ریاستی صدر امریندر سنگھ راجہ واڈنگ، سکریٹری اور ریاستی امور کے انچارج ہریش چودھری اور پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر پرتاپ سنگھ باجوہ نے ایک پریس کانفرنس میں یہ اطلاع دی۔

انہوں نے کہا کہ یاترا 10 جنوری کو شمبھو بارڈر سے پنجاب میں داخل ہوگی اور سری فتح گڑھ صاحب جائے گی۔ راہل گاندھی 11 جنوری کو پنجاب کا سفر شروع کرنے سے پہلے گرودوارہ فتح گڑھ صاحب میں ماتھا ٹیکنے کے بعد ایک جلسہ عام سے خطاب کریں گے۔


کانگریس لیڈروں نے کہا کہ کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی کی قیادت میں بھارت جوڑو یاترا ملک کے اتحاد اور سالمیت کے لیے اور نفرت کی سیاست کے خلاف ہے۔ یاترا کا مقصد ملک میں مہنگائی، بے روزگاری اور سرمایہ داری جیسے سلگتے ہوئے مسائل کی طرف عوام کی توجہ مبذول کرانا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب تک یاترا میں سماج کے مختلف طبقوں سے تعلق رکھنے والے افراد بشمول مختلف سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے افراد، فلمی شخصیات، گلوکار، ماہر معاشیات، صنعت کاروں نے شرکت کی ہے۔ انہوں نے پنجابی و غیر مقیم باشندوں سے بھی اس یاترا میں شامل ہونے کی اپیل کی۔

واڈنگ نے کہا کہ 'بھارت جوڑو یاترا' اب تک ملک کی 10 ریاستوں کا احاطہ کر چکی ہے۔ پنجاب کے بعد صرف جموں و کشمیر کا علاقہ رہ جائے گا۔ بھارت جوڑو یاترا سری نگر جاکر ختم ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ ابتدائی طور پر یاترا کے راستے کا تخمینہ 3570 کلومیٹر تھا جو مکمل ہونے تک 4000 کلومیٹر تک پہنچ سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ سفر سات دنوں تک پنجاب میں چلے گا اور اس کے آخری پڑاؤ مادھوپور سے جموں و کشمیر میں داخل ہونے سے ایک دن قبل پٹھان کوٹ میں ایک عوامی ریلی نکالی جائے گی۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔