شاہ رخ خان کے بیٹے آرین کو کم از کم 5 راتیں مزید جیل میں گزارنی ہوں گی

شاہ رخ خان کے بیٹے آرین خان کو ابھی کم از کم 20 اکتوبر تک جیل میں ہی رہنا ہوگا، عدالت نے این سی بی اور آرین خان کے وکیل کی دلیلیں سننے کے بعد فیصلہ 20 اکتوبر تک کے لیے محفوظ رکھ لیا ہے۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

شاہ رخ خان کے بیٹے آرین خان کو ابھی کم از کم 20 اکتوبر تک جیل میں ہی رہنا ہوگا۔ ممبئی سیشن کورٹ نے کروز شپ ڈرگس کیس میں آرین خان اور دیگر کی ضمانت عرضی پر سماعت کی۔ کورٹ نے این سی بی اور آرین خان کے وکیل کی دلیلیں سننے کے بعد ایک بار پھر فیصلہ 20 اکتوبر تک کے لیے محفوظ رکھ لیا ہے۔

ملزمین کی ضمانت عرضی پر جمعرات کو عدالت میں سماعت کے دوران فریق استغاثہ کی جانب سے اے ایس جی انل سنگھ نے دلیلیں دیں۔ وہیں آرین خان کی طرف سے وکیل امت دیسائی دلیلیں رکھ رہے تھے۔ اے ایس جی نے کہا کہ ہم اس معاملے میں پورے چین اور کنکشن پر نظر بنائے ہوئے ہیں۔ انل سنگھ نے عدالت سے آرین خان کو ضمانت دینے کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ معاملہ اب بھی ابتدائی مرحلہ میں ہے اور آگے ابھی مزید باتیں سامنے آ سکتی ہیں۔


دوسری طرف آرین خان کے وکیل امت دیسائی نے انھیں ضمانت دینے کی وکالت کرتے ہوئے کہا کہ آرین ہر ممکن تعاون کریں گے، لیکن آپ ان کے حقوق نہیں چھین سکتے ہیں اور انھیں ضمانت ملنی چاہیے۔ آرین خان کے وکیل نے کہا کہ آج کے جنریشن کے بچوں کی زبان انگلش ہم سے کافی الگ ہے۔ ان کی بات چیت ایجنسی کو شبہات پر مبنی لگ سکتی ہے۔ وکیل امت دیسائی نے پوچھا کہ کیا یہ لڑکا آپ کو لگتا ہے کہ انٹرنیشنل ڈرگ ٹریفکنگ میں شامل ہوگا؟ امت دیسائی نے کہا کہ میں کسی کو بری کرنے کے لیے نہیں، ضمانت کے لیے کہہ رہا ہوں۔ عدالت نے دونوں فریقین کو سننے کے بعد فیصلہ 20 اکتوبر تک کے لیے محفوظ رکھ لیا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔