بنگلور بمقابلہ راجستھان: ڈیویلیرس نے بتائی اپنی طوفانی بلے بازی کی وجہ

اے بی ڈیویلیرس نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ "میں نے گزشتہ میچ میں اپنی ذمہ داری اس طرح سے نہیں نبھائی تھی، جس طرح سے نبھانی چاہیے تھی۔ لیکن اس بار میں نے اپنا کام بخوبی انجام دیا۔"

اے بی ڈیویلیرس، تصویر ٹوئٹر
اے بی ڈیویلیرس، تصویر ٹوئٹر
user

تنویر

ہفتہ کے روز یو اے ای میں کھیلے گئے آئی پی ایل سیزن 13 کے 33ویں میچ میں بنگلور نے راجستھان کو 7 وکٹ سے شکست دے دی۔ ایک وقت یہ میچ بنگلور کے ہاتھ سے پھسلتا ہوا معلوم پڑ رہا تھا لیکن مسٹر 360 ڈگری کے نام سے مشہور اے بی ڈیویلیرس نے ایک بار پھر طوفانی بلے بازی کی اور محض 22 گیندوں پر 55 رن کی ناٹ آؤٹ اننگ کھیل کر آخری اوور کی چوتھی گیند پر چھکّا لگا کر میچ کو ختم کر دیا۔

میچ کے بعد اے بی ڈیویلیرس نے راجستھان کے خلاف اپنی طوفانی بلے بازی کی وجہ بتائی اور کہا کہ وہ ٹیم کے مالک کو دکھانا چاہتے تھے کہ آخر وہ یہاں کیوں ہیں۔ اپنے بیان میں ڈیویلیرس نے کہا کہ "میں بے حد خوش ہوں۔ مجھے لگتا ہے کہ ہم نے 20-15 رن زیادہ دے دیے تھے۔ میں نے اور وراٹ نے بات کی تھی کہ ہمیں کچھ شراکت داریوں کی ضرورت ہے۔ میں گھبرایا ہوا تھا۔ میں دیگر کھلاڑیوں کی طرح ہی دباؤ میں تھا۔ میں ٹیم کے لیے اچھا کرنا چاہتا تھا اور ٹیم کے مالکوں کو بتانا چاہتا تھا کہ میں یہاں اچھی وجہ سے ہوں۔ ساتھ ہی دوستوں کو، فیملی کو، خود کو بھی بتانا چاہتا تھا۔"

اپنے بیان کو آگے بڑھاتے ہوئے ڈیویلیرس نے یہ بھی کہا کہ "میں نے گزشتہ میچ میں اپنی ذمہ داری اس طرح سے نہیں نبھائی تھی، جس طرح سے نبھانی چاہیے تھی۔ لیکن اس بار میں نے اپنا کام بخوبی انجام دیا۔" قابل ذکر ہے کہ راجستھان نے آج پہلے بلے بازی کرتے ہوئے 177 رن بنایا تھا اور بنگلور نے 19.4 اوور میں 7 وکٹ کے نقصان پر ہی جیت کے لیے ضروری ہدف حاصل کر لیا۔

next