کورونا وائرس سے متعلق تحقیقات میں زیادہ شفافیت کی ضرورت ہے: ڈبلیو ایچ او

ڈبلیو ایچ او کے ڈائریکٹر جنرل نے بتایا کہ جی-7 رہنماؤں نے ہفتہ کو وبائی امراض کی وجوہات کے بارے میں تبادلہ خیال کیا اور کووڈ- 19 کے وجود کی تحقیقات کے اگلے مرحلے کی تیاری جاری ہے۔

کورونا ویکسین / آئی اے این ایس
کورونا ویکسین / آئی اے این ایس
user

یو این آئی

لندن: ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) کے ڈائریکٹر جنرل ٹیڈروس اڈنوم گیبریئس نے چین سے کورونا وائرس کی اصل تحقیقات میں تعاون کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ وال اسٹریٹ جرنل نے جی-7 سربراہی اجلاس کے بعد ڈاکٹر ٹیڈروس کے حوالے سے بتایا ہے کہ "جیسا کہ آپ جانتے ہیں کہ ہمیں چین کی طرف سے تعاون کی ضرورت ہوگی۔ ہمیں اس وائرس کی اصلیت کو سمجھنے، جاننے یا اس کا پتہ لگانے کے لئے شفافیت کی ضرورت ہے۔ رپورٹ کے اجراء کے بعد اعداد و شمار کا اشتراک کرنے میں دشواریوں کا سامنا کرنا پڑا۔ "

ڈبلیو ایچ او کے ڈائریکٹر جنرل نے بتایا کہ جی-7 رہنماؤں نے ہفتہ کو وبائی امراض کی وجوہات کے بارے میں تبادلہ خیال کیا اور کووڈ- 19 کے وجود کی تحقیقات کے اگلے مرحلے کی تیاری جاری ہے۔ ڈاکٹر ٹیڈروس نے بتایا کہ چین سے مزید تعاون اور شفافیت کی توقع ہے۔


امریکی صدر جو بائیڈن نے حال ہی میں امریکی انٹیلی جنس کو حکم دیا ہے کہ وہ کورونا وائرس کی ابتداء پر دوبارہ جائزہ لینے کے لئے ایک رپورٹ تیار کرے اور اس بات کا تعین کرنے میں مدد کرے کہ یہ بیماری کسی تجربہ گاہ سے لیک ہوئی ہے یا کسی متاثرہ جانور سے انسان میں پھیلی ہے۔ تاہم، چین لیبارٹری سے وائرس کے لیک ہونے کے نظریہ کو ایک سازش قرار دے رہا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔