افغانستان کو کورونا ویکسین کی 30 لاکھ سے زائد خوراکیں فراہم کرے گا چین

اقوام متحدہ میں چینی مشن کے سربراہ چن شو نے پیر کو کہا کہ چین نے افغانستان کو فوری طور پر خوراک، موسم سرما کی ضروریات کا ضروری سامان، کووڈ ویکسین اور 20 کروڑ یوآن کی ادویات فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

جنیوا: چین دہشت گرد تنظیم طالبان کے قبضے کے بعد بحران کا شکار افغانستان کو کووڈ- 19 ویکسین کی 30 لاکھ سے زائد خوراکیں عطیہ کرے گا۔ ایک سینئر چینی سفارت کار نے یہاں یہ اطلاع دی۔ انہوں نے بتایا کہ پہلی کھیپ میں کورونا ویکسین کی 30 لاکھ خوراکیں فراہم کی جائیں گی۔ بعد میں ویکسین کی مزید خوراکیں ہنگامی حالات میں سپلائی کی جائیں گی۔

اقوام متحدہ میں چینی مشن کے سربراہ چن شو نے پیر کو کہا کہ چین نے افغانستان کو فوری طور پر خوراک، موسم سرما کی ضروریات کا ضروری سامان، کووڈ ویکسین اور 20 کروڑ یوآن کی ادویات فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ چین نے ہمیشہ اپنے قریبی پڑوسی کی حیثیت سے افغانستان کی خود مختاری، آزادی اور علاقائی سالمیت کا احترام کیا ہے، اس کے اندرونی معاملات میں کبھی مداخلت نہیں کی اور تمام افغان عوام کے لیے دوستانہ پالیسی اختیار کی۔


چن شو نے افغانستان میں انسانی صورتحال پر ایک اعلی سطحی وزارتی میٹنگ میں کہا کہ ’’چین افغان عوام کی خواہشات اور ضروریات کا احترام کرنا جاری رکھے گا اور افغانستان کی پرامن تعمیر نو اور اقتصادی ترقی کی حمایت کرنے کی پوری کوشش کرے گا‘‘۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ چین افغانستان میں انسانی بحران کو کم کرنے میں بڑا رول ادا کرنے اور افغانستان کو جلد از جلد انفیکشن کی صورتحال سے آسانی سے باہر نکالنے اور پرامن ترقی کے راستے پر چلنے میں مدد کرنے کے لئے اقوام متحدہ کی حمایت کرتا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔