افغانستان میں تین دن کی جنگ بندی، ناٹو نے خوش آئند قرار دیا

جینس اسٹولٹن برگ نے ٹوئٹ کرکے کہا کہ عید کے موقع پر تین دن کی جنگ بندی پر افغانستان حکومت اور طالبان کے بیانات کا میں خیر مقدم کرتا ہوں۔ تمام فریقوں کو امن کے لئے اس موقع کا فائدہ اٹھانا چاہیے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

واشنگٹن: ناٹو کے سکرٹری جنرل جینس اسٹولٹن برگ اور افغانستان میں مفاہمت کے لئے امریکہ کے خصوصی نمائندے زلمے خلیل زاد نے افغانستان میں تین دن کی جنگ بندی کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ اس سے امن کی راہ نکلنی چاہیے۔ جینس اسٹولٹن برگ نے ہفتہ کو ٹوئٹ کرکے کہا کہ’’عید کے موقع پر تین دن کی جنگ بندی پر افغانستان حکومت اور طالبان کے بیانات کا میں خیر مقدم کرتا ہوں۔ تمام فریقوں کو امن کے لئے اس موقع کا فائدہ اٹھانا چاہیے۔ ناٹو افغانستان کی طویل مدتی سلامتی کے لئے مصروف عمل ہے‘‘۔

اس دوران امریکہ کے خصوصی نمائندے خیل زاد نے کہا کہ امن کے لئے اس موقع کو نہیں گنوانا چاہیے، امریکہ اس میں مدد کرے گا۔ خلیل زاد نے اپنے ٹوئٹ میں کہا کہ ’’دیگر مثبت اقدامات پر فوری طور پر عمل کرنا چاہیے، مثلاً دونوں پارٹیوں کی جانب سے امریکہ طالبان کے معاہدے کے تناظر میں باقی قیدیوں کی رہائی، تشدد میں کمی لانا، اور انٹر-افغان مذاکرات کے آغاز کے لئے ایک نئی تاریخ رکھنی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ ’’یہ قدم امن عمل میں تیزی لانے کا موقع فراہم کرتا ہے‘‘۔


قابل ذکر ہے کہ دہشت گرد تنظیم طالبان نے ہفتہ کو عید الفطر کے موقع پر افغانستان میں تین دن کی جنگ بندی کا اعلان کیا ہے۔ افغانستان کے صدر اشرف غنی نے جنگ بندی کے اعلان کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ حکومت امن کی پیشکش میں توسیع کر رہی ہے اور انہوں نے افغان قومی دفاع سیکورٹی فورسز کو اتوار کو مؤثر ہونے والے اس جنگ بندی پر عمل کرنے کا حکم دیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔