حکومت نے دی متحدہ عرب امارات کو اضافی 10,000 ٹن پیاز برآمد کرنے کی اجازت

خشک سالی کی وجہ سے حکومت کو مالی سال 2023-24 کے دوران پیاز کی برآمدات کو کنٹرول کرنے کے لیے اقدامات کی ضرورت پڑی۔ ان اقدامات میں 19 اگست 2023 سے پیاز کی برآمدات پر 40 فیصد ڈیوٹی لگائی گئی ہے۔

<div class="paragraphs"><p>تصویر: آئی اے این ایس</p></div>

تصویر: آئی اے این ایس

user

قومی آوازبیورو

حکومت نے نیشنل کوآپریٹو ایکسپورٹ لمیٹڈ (این سی ای ایل) کے ذریعے متحدہ عرب امارات کو اضافی 10,000 ٹن پیاز برآمد کرنے کی اجازت دی ہے۔ حکومت نے یہ فیصلہ ایسے وقت میں لیا ہے جب عید کا تہوار قریب آ رہا ہے۔ ڈائریکٹوریٹ جنرل آف فارن ٹریڈ (ڈی جی ایف ٹی) کی طرف سے منگل (2 اپریل) کو دیر رات جاری گیا یہ حکم 14,400 ٹن پیاز کے علاوہ ہوگا جنہیں پہلے یکم مارچ کو متحدہ عرب امارات کو برآمد کرنے کی اجازت دی گئی تھی۔ یہ برآمدگی این سی ای ایل کے ذریعے کی جا رہی ہے، جس نے ہر سہ ماہی کے لیے 3,600 میٹرک ٹن کی مقدار کی حد مقرر کر رکھی ہے۔

واضح رہے کہ پیاز کی بڑھتی گھریلو قیمتوں پر قابو پانے کے لیے 8 دسمبر 2023 کو پیاز کی ترسیل پر پابندی کے اعلان کے بعد دوست ممالک سے کیے گئے وعدوں کو پورا کرنے کے لیے اب تک 79,150 ٹن پیاز برآمد کرنے کے لیے منظوری دے دی گئی ہے۔ خشک سالی کی وجہ سے حکومت کو مالی سال 2023-24 کے دوران پیاز کی برآمدات کو کنٹرول کرنے کے لیے اقدامات کی ضرورت پڑی۔ ان اقدامات میں 19 اگست 2023 سے پیاز کی برآمدات پر 40 فیصد ڈیوٹی عائد کرنا، 29 اکتوبر 2023 سے 800 امریکی ڈالر فی میٹرک ٹن کی کم از کم برآمدی قیمت (ایم ای پی) عائد کرنا اور سستی قیمتوں کو یقینی بنانے کے لیے 8 دسمبر 2023 سے برآمدات پر پابندی لگا کر گھریلو صارفین کو اس میں سستی قیمت پر پیاز کی دستیابی کو یقینی بنانا شامل ہے۔


پیاز کی بڑھتی قیمتوں کے ساتھ مرکزی حکومت اپنے بفر اسٹاک سے اہم سبزیوں کو جاری کر رہی ہے۔ اس نے 26 مارچ کو این سی سی ایف اور این اے ایف ای ڈی کو ہدایت کی تھی کہ وہ ربیع 2024 کی رواں فصل کے دوران ملک کی بفر کی ضرورت کے لیے کسانوں سے براہ راست 5 لاکھ ٹن پیاز خریدے۔ واضح رہے کہ ربیع پیاز کی فصل ملک میں پیاز کی دستیابی کے لیے اہم ہے، کیونکہ یہ ملک کی سالانہ پیداوار میں 72-75 فیصد حصہ ڈالتی ہے۔ ربیع کی پیاز سال بھر پیاز کی دستیابی کو یقینی بنانے کے لیے بھی ضروری ہے، کیونکہ اس میں خریف کے پیاز سے بہتر شیلف لائف ہوتا ہے اور اسے نومبر-دسمبر تک سپلائی کے لیے ذخیرہ کیا جا سکتا ہے۔


/* */