عراق کی اصل شناخت ’عرب ملک‘ ہے جو تبدیل نہیں ہو سکتی: خالد بن سلمان

خالد بن سلمان نے لکھا کہ سعودی عرب کے لیے عراق کی سب سے بڑی اہمیت اس کا عرب ملک ہونا ہے اور عراق کی یہ نسبت کسی صورت میں تبدیل یا ختم نہیں ہوسکتی ہے۔

خالد بن سلمان / العربیہ ڈاٹ نیٹ
خالد بن سلمان / العربیہ ڈاٹ نیٹ
user

قومی آوازبیورو

ریاض: سعودی عرب کے نائب وزیر دفاع شہزادہ خالد بن سلمان نے زور دے کر کہا ہے کہ عراق کی اصل شناخت اس کا صدیوں سے ایک عرب ملک ہونا ہے اور عراق کی یہ حیثیت سعودی عرب کے لیے غیرمعمولی اہمیت کی حامل ہے جسے تبدیل نہیں‌ کیا جاسکتا ہے۔ مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ 'ٹوئٹر' پر پوسٹ کردہ متعدد ٹوئٹس میں انہوں‌ نے عراق کے وزیراعظم مصطفیٰ الکاظمی کے دورہ سعودی عرب کی اہمیت پر روشنی ڈالی۔ ان کا کہنا تھا کہ عراقی وزیراعظم کا دورہ سعودی عرب و عراق دونوں ممالک کے درمیان وسیع تر تعلقات اور تعاون کی عکاسی کرتا ہے۔

انہوں نے لکھا کہ سعودی عرب کے لیے عراق کی سب سے بڑی اہمیت اس کا عرب ملک ہونا ہے اور عراق کی یہ نسبت کسی صورت میں تبدیل یا ختم نہیں ہوسکتی ہے۔ حالات چاہے جو بھی ہوں اور بحران کتنے ہی سنگین کیون نہ ہوں مگر عراق کی عرب شناخت تبدیل نہیں ہوسکتی۔ سعودی عرب نے عراق کو ہمیشہ اپنا بھائی سمجھا اور ایک بڑے بھائی کی حیثیت نے برادر ملک عراق کے ساتھ مکمل وفاداری اور بھائی چارے کا ثبوت پیش کیا۔

خالد بن سلمان کا کہنا تھا کہ عراقی وزیراعظم مصطفیٰ الکاظمی ہمارے معزز مہمان ہیں جو خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی دعوت پر سعودی عرب آئے ہیں۔ خیال رہے کہ عراقی وزیراعظم مصطفیٰ الکاظمی بدھ کے روز سعودی عرب کے سرکاری دورے پر الریاض پہنچے تھے جہاں انہوں نے سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز اور دیگر رہنمائوں سے ملاقات کی ہے۔

بشکریہ العربیہ ڈاٹ نیٹ

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔