قومی آواز بلیٹن: عبادت گاہوں کو کھولنے کے لیے رہنما ہدایات جاری؛ صرف سلوگن سے لوگ خود کفیل نہیں بن سکتے

پیش خدمت ہیں آج کی کچھ اہم خبریں: گنّا کسان کی خودکشی پر پرینکا گاندھی نے یوگی حکومت کو بنایا نشانہ؛ سعودی عرب میں کورونا ویکسین کے لیے ڈیڑھ ارب ڈالر مختص؛ دہلی میٹرو کے 20 ملازم کورونا پازیٹو

user

قومی آوازبیورو

مسجدوں میں قرآن پڑھنے پر پابندی، مندروں میں نہیں ملے گا پرساد!

ہندوستان میں کورونا وائرس کا انفیکشن لگاتار پھیلتا جا رہا ہے۔ اس درمیان 8 جون سے سبھی مذہبی مقامات اور عبادت گاہوں کو کھولے جانے کے پیش نظر مرکزی حکومت نے رہنما ہدایات جاری کر دی ہیں۔ اَن لاک-1 کے تحت صرف کنٹنمنٹ زون کے ہی مذہبی مقامات بند رہیں گے۔ مرکزی وزارت برائے صحت و خاندانی بہبود نے مذہبی مقامات و عبادت گاہوں کے تعلق سے جو رہنما ہدایات جاری کیے ہیں اس کے مطابق جسمانی فاصلے کا خیال رکھنا سب سے اہم ہے۔ انہوں نے اس کی وجہ مذہبی مقامات پر لوگوں کی بڑی تعداد میں موجودگی بتائی ہے۔

رہنما ہدایات کے مطابق عبادت گاہوں میں مذہبی کتابوں کو چھونے پر پابندی عائد کی گئی ہے یعنی اس ہدایت کے مطابق مسجدوں میں رکھے قرآن مجید کو پڑھنے سے لوگوں کو منع کیا گیا ہے۔ رہنما ہدایات میں اجتماعی عبادت سے بچنے کے لیے کہا گیا ہے کیونکہ اس دوران بہت زیادہ لوگ اکٹھا ہو جاتے ہیں۔ اس کا مطلب یہ ہوا کہ مسجدوں میں اتنے لوگوں کو ہی جانے کی اجازت مل سکے گی جس سے جسمانی فاصلہ یعنی سوشل ڈسٹنسنگ کو یقینی بنایا جا سکے۔

مذہبی مقامات و عبادت گاہوں کے باہر لوگوں کی قطار لگنے کی صورت میں ان کے درمیان کم از کم 6 فٹ کی دوری رکھنے کی سخت ہدایت ہے۔ مندر میں پرساد کی تقسیم اور گنگا جل کے چھڑکاؤ پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ مندروں میں مورتی چھونے کی اجازت بھی نہیں دی گئی ہے۔

گنّا کسان کی خودکشی پر پرینکا گاندھی نے یوگی حکومت کو آڑے ہاتھوں لیا

پرینکا گاندھی نےاتر پردیش میں ایک گنا کسان کی خودکشی کی خبر پر اظہار افسوس کیا اور اس کے لئے یوگی حکومت کو اڑے ہاتھوں لیا۔ انھوں نے یوگی حکومت پر کسانوں کو نظر انداز کیے جانے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ "بی جے پی حکومت کی کسان مخالف پالیسیوں سے چینی ملیں بند ہو رہی ہے اور گنا کسان خود کشی کرنے پر مجبور ہو رہے ہیں۔"

اپنے ٹوئٹ میں بی جے پی حکومت کو گنا کسان کی خودکشی کا ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے پرینکا گاندھی نے لکھا " اپنے گنے کی فصل کو کھیت میں سوکھتا دیکھ کر اور پرچی نہ ملنے کے سبب مظفر نگرکے ایک گنا کسان نے خود کشی کر لی۔ بی جے پی کا دعویٰ تھا کہ 14 دن میں مکمل ادائیگی ہو جائے گی لیکن ہزاروں کروڑ روپے دبا کر چینی ملیں بند ہو چکی ہیں۔" پرینکا گاندھی نے مزید لکھا "میں نے دو دن پہلے ہی حکومت کو اس کے لیے آگاہ کیا تھا۔ سوچیے، اس معاشی تنگی کے دور میں ادائیگی نہ پانے والے کسان خاندانوں پر کیا گزر رہی ہوگی۔ لیکن بی جے پی حکومت اب 14 دنوں میں گنے کی ادائیگی کا نام تک نہیں لیتی۔"

سعودی عرب میں کورونا ویکسین کی تیاری کے لیے ڈیڑھ ارب ڈالر مختص

سعودی عرب کے وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے بتایا ہے کہ سعودی عرب نے کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے ڈیڑھ ارب ڈالر کی رقم مختص کی ہے۔ کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے منعقدہ ایک ورچوئل کانفرنس سے خطاب کے بعد انہوں نے کہا ہے کہ مملکت کی طرف سے کرونا وبا سے بچاؤ کی خاطر ویکسسین کی تیاری کے لیے ڈیڑھ ارب ڈالر مختص کیے گئے ہیں، جبکہ عالمی سطح پر اس وبا پر قابو پانے اور اس کی روک تھام کے لئے پانچ سو ملین ڈالر کی رقم مختص کی جائے گی۔

صرف سلوگن دینے سے لوگ خود کفیل نہیں بن سکتے... کپل سبل کا پی ایم مودی پر الزام

کانگریس کے سینئر لیڈر کپل سبل نے ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا ہے کہ وزیر اعظم مودی کے ذریعہ خود کفیل بننے کے لیے سلوگن دینے سے بات نہیں بنے گی بلکہ خود کفیل بننے کے لیے راستہ ہموار کرنا ہوگا۔ انھوں نے کہا کہ ”پی ایم کے ذریعہ خود کفیل بننے کا اعلان کر دینے سے پونجی تیار نہیں ہو جائے گی۔ ملک کو بتائیے کہ بغیر معاشی پالیسی، صنعتی پالیسی، مینوفیکچرنگ پالیسی کیسے خود کفیل ہوں گے؟ انہوں نے کہا کورونا بحران کے دوران سب سے زیادہ ڈجیٹل کمپنیوں کو فائدہ ہوا ہے اور یہ سارے ڈجیٹل پلیٹ فارم غیرملکی ہاتھوں میں ہیں“

پوری دنیا میں کورونا سے ہونے والی اموات کی تعداد چار لاکھ کے قریب

پوری دنیا میں کورونا کا قہر جاری ہے۔ تازہ اعداد و شمار کے مطابق پوری دنیا میں کورونا متاثرین کی تعداد ساڑھے 67 لاکھ کے قریب پہنچ گئی ہے اور مرنے والوں کی تعداد چار لاکھ کے قریب پہنچ گئی ہے۔

ہندوستان میں بھی کورونا وائرس کا قہر بڑھتا ہی جارہا ہے اور اب یہاں متاثرین کی تعدا د سوا دو لاکھ سے زیادہ ہو گئی ہے اور ہلاک ہونے والوں کی تعداد 6 ہزار کے اوپر پہنچ گئی ہے۔ امریکہ میں تازہ اعداد و شمار ملنے تک کورونا وبا سے اب تک 19 لاکھ سے زیادہ لوگ متاثر ہوچکے ہیں جبکہ ایک لاکھ 10 سے زیادہ لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔

دہلی میٹرو سروس بحال ہونے سے پہلے ہی 20 ملازم کورونا پازیٹو

ابھی یہ واضح نہیں ہے کہ دہلی میں میٹرو خدمات کب سے بحال ہوں گی لیکن ایک خبر ایسی آئی ہے جس سے تشویش پیدا ہو گئی ہے۔ خبر آئی ہے کہ میٹرو خدمات عوام کے لیے دوبارہ شروع ہونے سے پہلے ہی اس کے 20 ملازمین کورونا کی زد میں آ گئے ہیں۔ دہلی میٹرو ریل کارپوریشن یعنی ڈی ایم آر سی نے اس سلسلے میں ایک ٹوئٹ کیا ہے اور 20 ملازمین کے کورونا پازیٹو ہونے کی تصدیق کی ہے۔ ڈی ایم آر سی کا کہنا ہے کہ ان میں سے کسی میں بھی کورونا کی علامت دکھائی نہیں دے رہی تھی لیکن یہ پازیٹو پائے گئے۔

قومی آواز کے قارئین و ناظرین سے ضروری گزارش، انتہائی ضروری ہو تو گھر سے باہر جائیں، شکریہ
next