سیتاپور لو جہاد: مقدمہ ختم کرنے والی عرضداشت پر عدالت میں سماعت 20 جنوری کو

گلزار اعظمی نے کہا کہ ملزمین کی پیروی کرنے کے لئے جمعیۃ علماء نے سینئر ایڈوکیٹ آئی بی سنگھ کی خدمت حاصل کی ہے، جبکہ ان کی معاونت کرنے کے لیے ایڈوکیٹ عارف علی اور ایڈوکیٹ فرقان موجود رہیں گے۔

الہ آباد ہائی کورٹ، تصویر آئی اے این ایس
الہ آباد ہائی کورٹ، تصویر آئی اے این ایس
user

پریس ریلیز

نئی دہلی: یوپی کے سیتا پور شہر سے لوجہاد کے نام پر گرفتار دس ملزمین، جس میں دو خاتین بھی شامل ہیں، کو مقدمہ سے ڈسچارج یعنی کہ ان کے خلاف قائم مقدمہ ختم کر کے انہیں جیل سے فوراً رہا کیے جانے کی عرضداشت پر الہ آبادہائی کورٹ کی لکھنؤ بنچ کل یعنی کے 20 جنوری کو سماعت کرے گی۔ جسٹس راجیو سنہا اور جسٹس راجیو سنگھ کے روبرو معاملہ سماعت کے لیے پیش ہوگا، جو یہ فیصلہ کریں گے آیا ملزمین کے خلاف مقدمہ بنتا ہے یا نہیں۔

اس سلسلے میں تفصیلی جانکاری آج ملزمین کو قانونی امداد فراہم کرنے والی تنظیم جمعیۃ علماء مہاراشٹر (ارشد مدنی) قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزار اعظمی نے دی۔ گلزار اعظمی نے کہا کہ ملزمین کی پیروی کرنے کے لئے جمعیۃ علماء نے سینئر ایڈوکیٹ آئی بی سنگھ کی خدمت حاصل کی ہے، جبکہ ان کی معاونت کرنے کے لیئے ایڈوکیٹ عارف علی اور ایڈوکیٹ فرقان موجود رہیں گے، جنہوں نے پٹیشن تیار کی ہے۔

اس ضمن میں گلزار اعظمی نے کہا کہ یو پی حکومت لو جہاد کے نام پر مسلمانوں کو ہراساں کر رہی ہے اور آئین ہند کے ذریعہ حاصل بنیادی حقوق کو اقتدار کے بل بوتے پر پامال کر رہی ہے نیز لو جہاد کو غیرقانونی قرار دینے والے قانون کا سہارا لے کر اتر پردیش پولیس مسلمانوں کو پریشان کر رہی ہے اور انہیں جیل کی سلاخوں کے پیچھے دھکیل رہی ہے، جس کی ایک مثال یہ مقدمہ ہے جس میں مسلم لڑکے کے والدین، قریبی رشتہ داروں کو گرفتار کرلیا گیا ہے جبکہ ان کا اس معاملے سے کوئی لینا دینا نہیں ہے، مسلم لڑکا اور ہندو لڑکی نے اپنی مرضی سے شادی کی ہے اور دونوں فی الحال کہاں ہیں کسی کو نہیں معلوم، لیکن لڑکی کے والد کی فریاد پر مقامی پولیس نے دو خواتین سمیت دس لوگوں کو گرفتار کرلیا، جس کے بعد سے پورے علاقے میں خوف و ہراس کا ماحول ہے۔

گلزار اعظمی کا کہنا ہے کہ گرفتار شدگان شمشاد احمد، رفیق اسماعیل، جنید شاکر علی، محمد عقیل منصوری، اسرائیل ابراہیم، معین الدین ابراہیم، میکائیل ابراہیم، جنت الا براہیم، افسری بانو اسرائیل عثمان بقرعیدی کے خلاف قائم مقدمہ ختم کرنے کی عدالت سے گزارش کی گئی ہے جس پر کل سماعت عمل میں آئے گی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


next