پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر دہشت گردانہ حملہ میں 5 شہری کی موت، 4 حملہ آور بھی ہلاک

کراچی واقع پاکستان اسٹاک ایکسچینج (پی ایس ایکس) میں گولی باری اور گرینیڈ حملہ میں کم و بیش 5 شہریوں کی موت ہو گئی اور تین زخمی ہو گئے ہیں۔ پولس کا کہنا ہے کہ حملہ کرنے والے سبھی 4 دہشت گرد مارے گئے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

کراچی واقع پاکستان اسٹاک ایکسچینج (پی ایس ایکس) میں گولی باری اور گرینیڈ حملہ میں کم و بیش 5 شہریوں کی ہلاکت کی خبریں سامنے آئی ہیں۔ اس دہشت گردانہ حملہ میں 3 شہری زخمی بھی ہو گئے ہیں جن کو علاج کے لیے قریبی اسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔ دہشت گردانہ حملہ کی اطلاع جیو نیوز کے ذریعہ شائع ایک رپورٹ سے ملی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پی ایس ایکس کی عمارت میں 4 دہشت گردوں نے حملہ کر دیا اور پھر گولی باری شروع ہو گئی۔ پولس کا کہنا ہے کہ سبھی دہشت گرد جوابی کارروائی کے دوران مارے گئے۔ دہشت گردوں نے عمارت کے مین گیٹ پر گرینیڈ سے حملہ کیا تھا اور پھر اندھا دھند گولی باری کے بعد عمارت کے اندر داخل ہو گئے۔ رینجرس اور پولس کے جوان عمارت کے اندر گھس گئے ہیں اور اس وقت سرچ آپریشن جاری ہے۔

دہشت گردانہ حملہ کے دوران زخمی لوگوں میں پی ایس ایکس عمارت کے باہر تعینات ایک پولس افسر اور سیکورٹی گارڈ بھی شامل ہے۔ وہیں آس پاس کے علاقوں کو پولس اور رینجرس کے جوانوں نے سیل کر دیا ہے۔ پی ایس ایکس عمارت کے اندر سے لوگوں کو پیچھے کے دروازے سے باہر نکالا گیا۔ پی ایس ایکس کے ڈائریکٹر عابد علی حبیب نے کہا کہ "پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں ایک افسوسناک واقعہ سرزد ہوا ہے۔" انھوں نے مزید کہا کہ "وہ پارکنگ ایریا سے آئے اور سبھی پر کھلے عام گولی چلانے لگے۔"

کراچئی کے آئی جی کا کہنا ہے کہ حملہ آوروں نے مبینہ طور پر پولس افسران کے کپڑے پہنے ہوئے تھے، جو وہ آف ڈیوٹی پر پہنتے ہیں۔ دہشت گردوں نے جدید اسلحوں کے ساتھ حملہ کیا اور ایک بیگ لے جا رہے تھے جس میں غالباً دھماکہ خیز مادہ ہو سکتا ہے۔ پاکستان اسٹاک ایکسچینج کے آس پاس کے علاقے کو خالی کرا لیا گیا ہے۔ زخمیوں کو نزدیکی اسپتال میں عالج کے لیے داخل کرایا گیا ہے۔

Published: 29 Jun 2020, 1:42 PM