پاکستان میں پانچ مئی سے گھریلو پرواز پر پابندی عائد کرنے کی سفارش

این سی او سی نے عید کے تہوار کے پیش نظر آٹھ سے 16 مئی تک کی چھٹیوں کی منظوری دی اور چھٹیوں کے دوران تمام سیاحتی سرگرمیوں پر پابندی عائد کی ہے

علامتی، تصویر آئی اے این ایس
علامتی، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

اسلام آباد: پاکستان کے نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) نے سول ایوی ایشن اتھارٹی کو کورونا وائرس کی تیزی سے پھیلتی تیسری لہر پر قابو پانے کے لیے آئندہ پانچ سے 20 مئی تک گھریلو پروازوں پر پابندی لگانے کی سفارش کی ہے۔ این سی او سی نے اپنے ایک بیان میں یہ اطلاع دی۔ این سی او سی نے عید کے تہوار کے پیش نظر آٹھ سے 16 مئی تک کی چھٹیوں کی منظوری دی اور چھٹیوں کے دوران تمام سیاحتی سرگرمیوں پر پابندی عائد کی ہے، تاکہ عید کے تیوہار کے دوران عوام اپنے گھروں میں رہ کر تہوار منا سکیں۔

فورم نے بین ریاستی، انٹر سٹی عوامی نقل و حمل (ٹرانسپورٹ) پر بھی پابندی عائد کر دی ہے جبکہ 50 فیصد استعداد والی نجی گاڑیوں کو چلنے کی اجازت دی گئی ہے۔ اس نے ملک میں صحت نظام کی ضرورتوں کو پورا کرنے کے لیے 6000 ٹن آکسیجن اور 5000 آکسیجن سلنڈر کی درآمد کی بھی اجازت دی ہے۔

قبل ازیں این سی او سی کے صدر اسد عمر نے کہا کہ کووڈ-19 اسپتال، ملک میں پیدا ہونے والے آکسیجن کا 90 فیصد سے زیادہ حصہ استعمال میں لا رہے ہیں۔ پاکستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا وائرس کے 5480 نئے کیسز آئے ہیں اور اس وائرس سے 150 افراد کی موت ہوئی ہے۔ ملک میں کورونا متاثرین کی کل تعداد 815711 تک پہنچ گئی ہے اور 708193 افراد اس سے نجات پا چکے ہیں، جبکہ اس وبا کے سبب اب تک 17680 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔