پاکستان: وزیر اعظم عمران خان پر قومی اسمبلی کا اعتماد برقرار، 178 ووٹ کیے حاصل

ووٹنگ کا عمل مکمل ہونے کے اسپیکر قومی اسمبلی نے اعلان کیا کہ اگست 2018 میں عمران خان نے ایوان سے 176 ووٹ حاصل کیے تھے جبکہ آج انہیں 178 ارکان کے ووٹ حاصل ہوئے ہیں۔

ویڈیو گریب
ویڈیو گریب
user

قومی آوازبیورو

اسلام آباد: پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے قومی اسمبلی میں اعتماد حاصل کر لیا ہے۔ تحریک اعتماد پر ہفتہ کے روز ہونے والی ووٹنگ میں عمران خان کے حق میں 178 ووٹ ڈالے گئے۔ پاکسان میں سینیٹ انتخابات کے دوران وزیر مالیات عبد الحفیظ شیخ کی شکست کے بعد عمران خان حکومت کو قومی اسمبلی میں اکثریت ثابت کرنا پڑی۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ایوان میں قرارداد پیش کی اور جب ووٹنگ ہوئی تو عمران خان کے حق میں 178 ووٹ ڈالے گئے۔ وزیراعظم کو ایوان کا اعتماد حاصل کرنے کے لیے 172 ووٹ درکار تھے۔

ووٹنگ کا عمل مکمل ہونے کے بعد گنتی کی گئی اور اسپیکر قومی اسمبلی نے اعلان کیا کہ اگست 2018 میں عمران خان نے ایوان سے 176 ووٹ حاصل کیے تھے جبکہ آج کے اس خصوصی اجلاس میں جس میں اعتماد کا ووٹ دیا گیا، وزیراعظم نے ایوان کے 178 ارکان کے ووٹ حاصل کرلیے ہیں۔ اس طرح وزیر خارجہ کی پیش کردہ قرار داد منظور کرلی گئی۔

وزیراعظم کے اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے کے بعد ایوان نعروں سے گونج اٹھا اور اراکین اسمبلی کی جانب سے ڈیسک بجا کر وزیراعظم کو خراج تحسین پیش کیا گیا۔ قومی اسمبلی کے آج کے اجلاس میں اگرچہ اپوزیشن جماعتوں کے اراکین شریک نہیں ہیں، تاہم ایوان میں یہ دیکھنے کو ملا کہ اپوزیشن کی نشستوں پر نوٹ کو عزت دو کے نعرے لکھے ہوئے پلے کارڈ رکھ دیئے گئے تھے۔

واضح رہے کہ وزیراعظم کی جانب سے اپنے اراکین سے اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے کا اعلان رواں ہفتے ہونے والے سینیٹ انتخابات میں اسلام آباد کی نشست پر اپ سیٹ شکست کے بعد سامنے آیا تھا۔ 3 مارچ کو ایوان بالا کے انتخابات میں اسلام آباد کی جنرل نشست پر حکومتی اتحادی امیدوار حفیظ شیخ کو اپوزیشن جماعتوں کے مشترکہ امیدوار یوسف رضا گیلانی سے شکست ہوئی تھی اور حکومت ایوان زیریں میں اکثریت رکھنے کے باوجود یہ نشست ہار گئی تھی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔