پاکستان: سپریم کورٹ کی پہلی خاتون جج کے طور پر عائشہ ملک نے لیا حلف

اس موقع پر پاکستان کے چیف جسٹس گلزار احمد نے جسٹس عائشہ کو حلف دلایا۔ اس موقع پر پاکستان کے اگلے چیف جسٹس کے طور پر نامزد جسٹس عمر عطا بندیال اور سپریم کورٹ کے دیگر جج بھی موجود تھے۔

عائشہ ملک، تصویر ٹوئٹر @fawadchaudhry
عائشہ ملک، تصویر ٹوئٹر @fawadchaudhry
user

یو این آئی

اسلام آباد: جسٹس عائشہ ملک نے پیر کو پاکستان کے سپریم کورٹ کی پہلی خاتون جج کے طور پر حلف لیا۔ جیو ٹی وی نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ پاکستان کے چیف جسٹس گلزار احمد نے جسٹس عائشہ کو حلف دلایا۔ اس موقع پر پاکستان کے اگلے چیف جسٹس کے طور پر نامزد جسٹس عمر عطا بندیال اور سپریم کورٹ کے دیگر جج بھی موجود تھے۔

جسٹس عائشہ اس عہدے کے لئے 21 جنوری کو باضابطہ طور پر منتخب ہوئی تھیں۔ جیو ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق جسٹس عائشہ کا سپریم کورٹ کے جج کے طورپر تعینات ہونا آسان نہیں تھا، کیونکہ ملک بھر کے وکیلوں نے سینئر کو بنیاد بناکر ان کی تعیناتی کی مخالفت کی تھی۔ کیونکہ جسٹس عائشہ سینئرٹی میں لاہور ہائی کورٹ میں چوتھے مقام پر تھیں۔


اس دوران، پاکستان کے بار اسوسی ایشن نے سپریم کورٹ کی جج کے طورپر عائشہ ملک کی تقرری کے خلاف ہڑتال کی اپیل کی ہے۔ وہیں وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات حکومت پاکستان چودھری فواد حسین نے ٹوئٹ کرتے ہو ان کی حلف برداری کی تصویر پوسٹ کی اور لکھا کہ ایک طاقتور تصویر پاکستان میں خواتین کو بااختیار بنانے کی علامت ہے، مجھے امید ہے کہ وہ ہمارے عدالتی درجہ بندی کا اثاثہ ثابت ہوں گی… مبارک ہو۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔