ایک تقریب میں شاعر سے خوفزدہ عمران خان نے تنقید پر مبنی نظم کو درمیان میں ہی روک دیا!

پہلے تو پاکستان کے سرکاری ٹیلی ویژن پی ٹی وی نے شاعر کا نظم ہی کاٹ دیا، اور پھر اس کے بعد وزیر اعظم عمران خان نے شاعر کو درمیان میں ہی روک دیا اور کہا کہ برائے کرم تجارت سے جڑے معاملوں پر بات کریں۔

پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کی فائل تصویر آئی اے این ایس
پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کی فائل تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے بیرون ملکی سرمایہ کاری کو متوجہ کرنے کے لیے تازک کی راجدھانی دشانبے میں پاکستان-تاجکستان کاروبار پلیٹ فارم کو خطاب کرنے کے بعد ان کی پالیسیوں کی تنقید کرنے والے ایک شاعر کو درمیان میں ہی روک دیا۔ جیو ٹی وی کی ایک رپورٹ کے مطابق جمعرات کو ایک سوال-جواب سیشن کے دوران ایک شخص نے وزیر اعظم کے سامنے تنقید پر مبنی نظم سنانا شروع کر دیا، جسے عمران خان نے درمیان میں ہی روک دیا۔

رپورٹ کے مطابق ناظرین کے درمیان موجود پاکستانی شخص نے کہا کہ میرے پاس آپ کے لیے ایک نظم ہے، جو اس طرح ہے- ’اتنے ظالم نہ بنو‘۔ عمران بھائی، یہ تمھارے لیے ہے۔ پھر اس نے شعر سنایا- ’اب آپ ایک قیدی بن گئے ہیں۔ جب آپ کنٹینر پر احتجاج کرتے تھے تو آپ عظیم ہوا کرتے تھے۔‘‘ ابھی، ہمیں یقین نہیں ہو رہا ہے کہ آپ نے خود کو کس چیز میں شامل کر لیا ہے۔


اس کے بعد پہلے تو پاکستان کے سرکاری ٹیلی ویژن پی ٹی وی نے اس کی یہ نظم کاٹ دی، اور پھر اس کے بعد وزیر اعظم عمران خان نے شاعر کو درمیان میں ہی روک دیا اور کہا کہ برائے کرم تجارت سے جڑے معاملوں کے بارے میں بات کریں۔ ہم نظم کے لیے بعد میں بھی وقت نکال سکتے ہیں۔

واضح رہے کہ عمران خان اس وقت شنگھائی تعاون ادارہ (ایس سی او) کے قومی سربراہان کی کونسل 2021 میں حصہ لینے کے لیے تاجکستان میں ہیں اور ان کے ساتھ کپڑا، دوا، رسد اور دیگر سمیت کئی شعبوں کی 67 کمپنیوں کے نمائندوں سمیت ایک اعلیٰ سطحی نمائندہ وفد ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔