امریکہ: ووٹ شماری کے درمیان کئی شہروں میں پرتشدد مظاہرے، آریگن میں حالات کشیدہ

امریکہ میں ووٹوں کی گنتی درمیان کئی شہروں سے پرتشدد مظاہروں کی خبریں آ رہی ہیں۔ کئی جگہ مظاہرین نے دکانوں میں توڑ پھوڑ کی اور آریگن میں حالات انتہائی خراب بتائے جا رہے ہیں۔

نیو یارک پولس کے ذریعہ جاری تصویر
نیو یارک پولس کے ذریعہ جاری تصویر
user

تنویر

امریکہ میں صدارتی انتخاب کا حتمی نتیجہ ابھی تک برآمد نہیں ہو سکا ہے۔ تازہ رجحانات کے مطابق ڈیموکریٹس پارٹی کے امیدوار جو بائڈن جیت کے قریب ہیں، اور اگر کوئی بڑا الٹ پھیر نہیں ہوا تو وہ امریکہ کے اگلے صدر بن سکتے ہیں۔ اس درمیان امریکہ کے کئی حصوں میں مظاہرے بھی شروع ہو گئے ہیں۔ کچھ مقامات تشدد کے بھی واقعات پیش آئے ہیں۔

پولس کے مطابق پورٹ لینڈ سٹی میں فساد بھڑکنے کے بعد آریگن نیشنل گارڈ کو بلایا گیا۔ مقامی افسران کا کہنا ہے کہ مظاہرین کی بھیڑ نے شہر کے ذیلی علاقے میں کئی دکانوں میں توڑ پھوڑ کی اور فساد کیا۔ اس دوران جم کر تشدد دیکھنے کو ملا۔ علاوہ ازیں پورٹ لینڈ، آریلینڈ، فلاڈیلفیا، شکاگو اور نیو یارک میں بھی مظاہرے ہو رہے ہیں۔ لوگ سڑکوں پر نکلے ہوئے ہیں اور ووٹوں کی گنتی کے ساتھ ساتھ سیاہ فام تحریک اور دوسرے ایشوز بھی اٹھا رہے ہیں۔ نیو یارک کے مین ہٹن میں پولس نے 20 لوگوں کو گرفتار کیا تھا جن پر آگ زنی کرنے اور ولگوں پر کچرا-انڈا پھینکنے کا الزام ہے۔

نیو یارک کے پولس کمشنر نے ٹوئٹ پر ان اسلحوں کی تصویروں کو شیئر کیا جو فسادیوں سے برآمد ہوئے ہیں۔ ان میں چاقو، بندوق اور چھوٹے بم شامل ہیں۔ نیو یارک پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق لووَر مین ہٹن میں مظاہرین کی بے قابو بھیڑ اور پولس کے درمیان تصادم بھی ہوا۔ مظاہرین نے ایک گلی میں آگ لگا دی اور ایک افسر کے سامنے سیدھے تھوک دیا تھا۔

دوسری طرف وہائٹ ہاؤس سے محض کچھ دوری پر واقع بلیک لائیو میٹر پلازہ پر ایک ہزار سے زیادہ مظاہرین صدر ٹرمپ کی مخالفت کرنے کے لیے جمع ہو گئے تھے۔ سینکڑوں مظاہرین نے واشنگٹن کی سڑکوں پر مارچ نکالا اور کئی بار آمد و رفت کو متاثر کیا اور پٹاخے جلائے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


next