یوکرین کی دارالحکومت کیف میں ہیلی کاپٹر حادثے میں یوکرین کے وزیر داخلہ سمیت 18 افراد ہلاک، 22 زخمی

واقعے کے بعد سے آن لائن گردش کرنے والی ایک ویڈیو میں جائے وقوعہ پر چیخ و پکار سنی جا سکتی ہے جسے آگ نے اپنی لپیٹ میں لے لیا۔

<div class="paragraphs"><p>ہیلی کاپٹر، علامتی تصویر آئی اے این ایس</p></div>

ہیلی کاپٹر، علامتی تصویر آئی اے این ایس

user

قومی آوازبیورو

بوراواری میں ہیلی کاپٹر کے حادثے میں وزیر داخلہ ڈینس مونسٹیرسکی سمیت 18 افراد کی ہلاکت کی اطلاعات ہیں۔ پولیس نے بتایا کہ بدھ کے روز کیف کے علاقے میں ہیلی کاپٹر حادثے میں ہلاک ہونے والے 18 افراد میں یوکرین کے وزیر داخلہ بھی شامل ہیں۔ ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ یوکرین کے 3 وزراء اس حادثہ میں ہلاک ہوئے ہیں۔ بوراواری میں ہیلی کاپٹر کے حادثے میں مبینہ طور پر وزیر داخلہ ڈینس مونسٹیرسکی سمیت 18 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق یوکرین کے وزراء ریاستی ایمرجنسی سروس کے ہیلی کاپٹر میں سوار تھے۔

مقامی میڈیا رپورٹس کے مطابق تحقیقات کے ابتدائی ورژن کے مطابق بوراواری میں ہیلی کاپٹر حادثے کی وجہ پائلٹ کی غلطی پر شبہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔ واقعے کے بعد سے آن لائن گردش کرنے والی ایک ویڈیو میں جائے وقوعہ پر چیخ و پکار سنی جا سکتی ہے، جسے آگ نے اپنی لپیٹ میں لے لیا۔ دو بچوں کے 42 سالہ والد مونسٹیرسکی کو 2021 میں وزیر داخلہ مقرر کیا گیا تھا۔ بہرحال، ہیلی کاپٹر حادثہ میں 10 بچوں سمیت 22 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں جنھیں اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔


حکام کا کہنا ہے کہ حادثے کے وقت بچے اور ملازمین کنڈرگارڈن میں تھے۔ پولیس اور طبی عملے جائے وقوعہ پر کام کر رہے تھے۔ بوراواری نامی قصبے میں ہونے والے حادثے کا منظر کیف سے تقریباً 20 کلومیٹر (12 میل) شمال مشرق میں واقع ہے۔ روسی اور یوکرائنی افواج ماسکو کے حملے کے ابتدائی مراحل میں بوراواری کے کنٹرول کے لیے لڑیں، جب تک اپریل کے اوائل میں روس کی فوجیں واپس نہیں چلی گئیں۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔