یوگی کے وزراء کی بدزبانی جاری، اوم پرکاش راجبھر کو ’اسلم راجبھر‘ کہا گیا

وارانسی پہنچنے پر یوگی کابینہ میں وزیر انل راجبھر نے طنزیہ انداز میں کہا کہ ’’او پی راجبھر اور اکھلیش یادو نے مئو میں نقلی ریلی کی تھی۔ مئو کی زمین پر میں اصلی ریلی کروں گا۔‘‘

اوم پرکاش راجبھر، تصویر آئی اے این ایس
اوم پرکاش راجبھر، تصویر آئی اے این ایس
user

تنویر

اتر پردیش میں اسمبلی انتخاب کے پیش نظر سیاسی گرمی میں لگاتار اضافہ ہو رہا ہے۔ لیڈروں کے متنازعہ بیانات اور بدزبانیاں بھی دن بہ دن بڑھتی جا رہی ہیں۔ خصوصاً بی جے پی لیڈران اور یوگی کابینہ کے وزراء کے متنازعہ بیانات بڑھ گئے ہیں۔ تازہ بیان یوگی حکومت میں وزیر انل راجبھر نے دیا ہے، جنھوں نے اپنے ہی طبقہ سے تعلق رکھنے والے مشہور لیڈر اوم پرکاش راجبھر کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے بدزبانی کی۔

دراصل اوم پرکاش راجبھر نے گزشتہ دنوں زور آور لیڈر مختار انصاری سے جیل میں ملاقات کی تھی۔ اس واقعہ کو لے کر انل راجبھر نے اوم پرکاش راجبھر پر ناراضگی کا اظہار کیا اور انھیں ’اسلم راجبھر‘ تک کہہ ڈالا۔ ساتھ ہی انل راجبھر نے کہا کہ سماجوادی پارٹی اوم پرکاش راجبھر کو آگے کر کے مختار انصاری کو الیکشن جتانا چاہتی ہے۔


اپنے بیان میں انل راجبھر نے طنزیہ انداز میں کہا کہ ’’او پی راجبھر اور اکھلیش یادو نے مئو میں نقلی ریلی کی تھی۔ مئو کی زمین پر میں اصلی ریلی کروں گا۔‘‘ یہ بیان انھوں نے وارانسی پہنچنے کے بعد دیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ ’’اوم پرکاش نے راجبھر سماج کی بے عزتی کی ہے کیونکہ انھوں نے اسٹیج سے راجبھر کو شرابی کہا۔ اسی اسٹیج پر اکھلیش یادو تالی بجا رہے تھے۔‘‘

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔