ایئر انڈیا کے طیارہ میں خاتون نے بچے کو دیا جنم

عملے کے ارکان نے فوری طور پر طیارے کو فرینکفرٹ کی طرف موڑنے کا فیصلہ کیا تاکہ ماں اور بچے کو فوری طور پر طبی امداد فراہم کی جا سکے۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

نئی دہلی: لندن سے کوچی جانے والی ایئر انڈیا کی پرواز اس وقت قلقاریوں سے گونج اٹھی جب ایک حاملہ خاتون مسافر نے بچے کو جنم دیا۔ عملے کے ارکان نے فوری طور پر طیارے کو فرینکفرٹ کی طرف موڑنے کا فیصلہ کیا تاکہ ماں اور بچے کو فوری طور پر طبی امداد فراہم کی جا سکے۔ ایئر انڈیا کے ایک افسر نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ بچہ 5 اکتوبر کو پیدا ہوا تھا۔

انہوں نے کہا کہ ایئر انڈیا کی پالیسی کے مطابق 32 ہفتوں تک کی حاملہ مسافر ڈاکٹر کے ’فٹ ٹو فلائی سرٹیفکیٹ‘ کے بغیر سفر کر سکتے ہیں، جبکہ 32-35 ہفتوں کے درمیان حاملہ مسافروں کے لیے پرواز کے لیے ڈاکٹر کی منظوری لازمی ہے۔ اس معاملہ میں تقریباً 29 ہفتوں کی حاملہ خاتون نے اپنے ڈاکٹر کی طرف سے چیک ان کاؤنٹر پر سرٹیفکیٹ دکھایا تھا اور اسے فضائی سفر کے لیے موزوں قرار دیا گیا تھا۔


انہوں نے کہا کہ ہمارے لیے مسافروں کی سہولت اور ان کی خیریت سب سے بڑھ کر ہے۔ ہم خوش ہیں کہ ماں اور نوزائیدہ بچہ محفوظ ہیں۔‘‘

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔