جو اپنے آپ کو ’ہندو‘ کہتا ہے وہی ’ہندوستانی‘ ہے! بھاگوت

الور کے دورے پر پہنچے موہن آر ایس ایس کے سربراہ موہن بھاگوت نے کہا کہ جو بھی اپنے آپ کو ہندو کہتا ہے وہ ہندوستانی ہے اور ان دنوں باتوں میں کوئی فرق نہیں ہے۔

آر ایس ایس سربراہ موہن بھاگوت کی فائل تصویر 
آر ایس ایس سربراہ موہن بھاگوت کی فائل تصویر

یو این آئی

الور: راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کے سر سنگھ چالک موہن بھاگوت نے کہا ہے کہ ہندوستان اور ہندو الگ الگ بات نہیں ہے لیکن ہم ان دونوں باتوں کو بھولتے جا رہے ہے جو باعث تشویش ہے۔ بھاگوت یک روزہ دورے پر ضلع الور کے گهنكر گاؤں پہنچے تھے، جہاں انہوں نے 123 سالہ بابا کمل ناتھ کے آشرم میں اپنی سالگرہ پر ان کا آشیرواد لیا۔

انہوں نے اس موقع پر کہا کہ ہم لوگ ہندوستان کے ہیں اور ہم ہندو ہیں، جو ہندوستان کے ہیں اس کا مطلب سیدھا سیدھا وہ ہندو ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جو اپنے آپ کو ہندو کہتا ہے وہ ہندوستانی ہے۔ اس میں کوئی الگ الگ بات نہیں ہے لیکن ہم ان دونوں باتوں کو بھولتے جا رہے ہیں جو با عث تشویش ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہو سکتا ہے کہ یہ باتیں کسی کو غلط لگیں ، کسی کو صحیح لگیں یہ ان کے ذاتی خیالات ہیں ۔ انہوں نے بابا کمل ناتھ کے تعلق سے کہا کہ اس آشرم میں ایک عظیم شخصیت رہتی ہے اور ہمیں ان سے استفادہ کرنا چاہئے ۔ اس موقع پر الو ر رکن پارلیمنٹ مہنت بالک ناتھ بھی موجود تھے۔

اس سے قبل بھاگوت کے بذریعہ سڑک تیجارا کے پاس گہنکرگاؤں پہنچنے پر ان کا خیر مقد م کیا گیا۔ واضح رہے ہے کہ بھاگوت کا بدھ کو یوم پیدایش تھا جبکہ 123 سالہ بابا کمل ناتھ کا یوم پیدائش پیر کو تھا۔