ٹرمپ کے دعوے پر خاموش کیوں ہیں مودی، کانگریس کا سوال

کانگریس کے ترجمان رندیپ سرجے والا نے کہا، ’’ہمارے وزیر اعظم کب جاگیں گے اور اگر صدر ٹرمپ جھوٹ بول رہے ہیں تو کیا وہ اسے جھوٹ قرار دیں گے؟ یا سچ میں وزیر اعظم نے ڈونالڈ ٹرمپ کو ثالثی کی پیشکش کی ہے؟‘‘

اے آئی این ایس
اے آئی این ایس
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے کشمیر پر کیے گئے دعوے کے بعد سے حزب اختلاف مودی حکومت پر حملہ آور ہے۔ کانگریس نے وزیر اعظم نریندر مودی سے جاگ جانے اور ٹرمپ کے بیان کو جھوٹا قرار دینے کا چیلنج کیا ہے۔

واضح رہے کہ ٹرمپ نے پیر کی شب پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کے ساتھ میٹنگ سے قبل ایک پریس کانفرنس سے کہا تھا کہ وزیر اعظم مودی نے ان سے مسئلہ کشمیر کو حل کرنے کے لئے ثالثی کرنے کی پیشکش کی تھی۔

کانگریس کے ترجمان رندیپ سرجے والا نے ٹوئٹ کیا، ’’ہمارے وزیر اعظم کب جاگیں گے اور اگر صدر ٹرمپ جھوٹ بول رہے ہیں تو کیا وہ اسے جھوٹ قرار دیں گے؟ یا سچ میں وزیر اعظم نے ڈونالڈ ٹرمپ کو ثالثی کی پیشکش کی ہے؟‘‘

وہائٹ ہاؤس میں عمران خان کے ساتھ میٹنگ سے پہلے میڈیا سے بات کرتے ہوئے ٹرمپ نے کہا، ’’میں دو ہفتہ پہلے وزیر اعظم مودی کے ساتھ تھا، ہم نے اس مسئلہ پر بات کی اور حقیقت یہ ہے کہ انہوں نے کہا، ’’کیا آپ ثالثی کریں گے؟ میں نے کہا، ’کہاں‘۔ انہوں نے کہا، ’کشمیر میں‘ کیوںکہ کئی سالوں سے چلتا آ رہا ہے۔ میں حیران تھا کہ یہ کتنے سالوں سے چل رہا ہے، جس پر عمران خان نے بیچ میں کہا، ’ 70 سالوں سے‘۔

ٹرمپ نے کہا، ’’مجھے لگتا ہے کہ وہ (ہندوستان) اسے حل کرنا چاہتے ہیں اور میں سمجھتا ہوں کہ آپ (پاکستان) بھی اسے حل کرنے کے خواہاں ہیں۔ اگر میں اس میں تعاون کر پاؤں تو مجھے ثالثی کر کے خوشی ہوگی۔ ‘‘

سرجے والا نے اس دعوے پر وزیر اعظم کی خاموشی پر بھی سوال اٹھایا ہے۔ انہوں نے کہا، ’’ہمارے وزیر اعظم اس پر خاموش کیوں ہیں ان دونوں کے درمیان کیا بات ہوئی۔ خاص طور پر جب یہ ہماری خود مختاری کو متاثر کرنے والی بات ہے۔ ‘‘

Published: 23 Jul 2019, 6:10 PM